The news is by your side.

Advertisement

جی 7 گروپ ویکسینز کا عطیہ کرنے پر رضامند ہو جائے گا، بورس جانسن کو امید

لندن: برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے امید ظاہر کی ہے کہ امیر جمہوری ممالک کا گروپ ’جی سیون‘ غریب ممالک کو ایک ارب کرونا ویکسینز کا عطیہ کرنے پر رضامند ہو جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے توقع ظاہر کی ہے کہ جی سیون ممالک دنیا کے ترقی پذیر ملکوں کو کرونا ویکسین کی ایک ارب ویکسینز عطیہ کرنے پر رضا مند ہو جائیں گے۔

امریکی صدر جو بائیڈن کے ویکسین عطیہ کرنے کے اعلان کے چند گھنٹوں بعد بورس جانسن نے بھی اعلان کیا کہ برطانیہ ویکسین کی 10 کروڑ اضافی ڈوز عطیہ کرے گا۔

خیال رہے کہ برطانوی وزیر اعظم اس سے قبل جی سیون ممالک کی قیادت سے اپیل کر چکے ہیں کہ وعدہ کریں کہ 2022 کے آخر تک پوری دنیا کو ویکسین لگ جائے، انھوں نے یہ توقع بھی ظاہر کی کہ گروپ برطانیہ میں ہونے والی سہ روزہ کانفرنس کے دوران ایک ارب ڈوزز عطیہ کرے گا۔

دوسری طرف ویکسین کے حوالے سے مہم چلانے والے کچھ گروپس اس منصوبے کی مذمت کرتے ہوئے اسے سمندر میں قطرے سے تشبیہ دے رہے ہیں۔ آکسفیم کا کہنا ہے کہ دنیا کی 4 ارب آبادی کا انحصار کوویکس کی طرف سے دی جانے والی ویکسین پر ہے۔

بورس جانسن نے جمعے کے روز اپنے بیان میں کہا تھا کہ برطانیہ کی ویکسین مہم کی کامیابی کے بعد ہم اس پوزیشن میں ہیں کہ اضافی ویکسین ان کے ساتھ شیئر کریں جنھیں اس کی ضرورت ہے۔

واضح رہے کہ جی سیون ممالک میں کینیڈا، فرانس، جرمنی، اٹلی، جاپان، برطانیہ اور امریکا شامل ہیں۔ امریکا اپنی 64 فی صد آبادی کو کرونا ویکسین لگا چکا ہے، جب کہ برطانیہ نے 77 فی صد لوگوں کو ویکسین لگا دی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں