The news is by your side.

Advertisement

لاڑکانہ کے اسپتال میں آپریشن کے دوران مریضہ سے زیادتی کا انکشاف

کراچی: سندھ کے ضلع لاڑکانہ کے نجی اسپتال میں درندہ صفت ملزمان نے آپریشن کے دوران مریضہ کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق سندھ اسمبلی کے اجلاس میں رکن اسمبلی رعنا انصار نے لاڑکانہ کے نجی اسپتال میں پیش آنے والے واقعے سے متعلق انکشاف کیا۔

اسمبلی میں توجہ دلاؤ نوٹس پیش کرنے کے بعد انہوں نے بتایا کہ ’لاڑکانہ کے نجی اسپتال میں دورانِ آپریشن مریضہ کو زیادتی کا نشانہ بنایا گیا ہے‘۔

انہوں نے بتایا کہ ’خاتون کوسرجری کیلئے آپریشن تھیٹرمیں لے جاکر بے ہوش کیا گیا اور پھر انہیں تین ملازمین نے زیادتی کا نشانہ بنایا‘۔

توجہ دلاؤ نوٹس پر پیش ہونے کے بعد صوبائی وزیر برائے ترقی نسواں  شہلا رضا نے اس واقعے سے متعلق مزید تفصیلات ایوان میں پیش کیں۔

مزید پڑھیں: معذور خاتون سے مبینہ زیادتی کی کوشش، ملزم گرفتار

انہوں نے بتایا کہ ’مذکورہ واقعہ 12مارچ کو پیش آیا، جس کا مقدمہ درج کرنے کے بعد اسپتال کے تین ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا‘۔ صوبائی وزیر نے بتایا کہ ’زیادتی کے بعد مریضہ کا میڈیکل بھی کیا گیا، مگر ڈاکٹر کا ڈی این اے میچ نہیں ہوا‘۔

صوبائی وزیر نے بتایا کہ وہ اس معاملے کو از خود دیکھ رہی ہیں، واقعے میں ملوث افراد کو کسی صورت رعایت نہیں دی جائے گی بلکہ اُن کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں