The news is by your side.

Advertisement

والدین کی غفلت گھریلو پارٹی میں قیامت ڈھا گئی

ایریزونا: امریکی ریاست ایریزونا کے ایک شہر گلینڈل میں والدین کی غفلت نے 3 سالہ معصوم بچے کی جان لے لی۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق ایریزونا امریکا کے علاقے گلینڈل میں ایک تین سالہ بچی سوئمنگ پول میں ڈوب کر مر گئی، جب کہ اس کے والدین ایک دوسرے بچے کے ساتھ مصروف رہے۔

یہ افسوس ناک واقعہ اتوار کو پیش آیا، گلینڈل فائر ڈیپارٹمنٹ کے مطابق انھیں ایک بچی کے ڈوبنے کی اطلاع ملی، جب وہ جائے وقوع پر پہنچے تو بچی بے ہوش اور اس کے دل کی دھڑکن خاموش تھی، گھر میں ایک پارٹی چل رہی تھی جس میں بارہ افراد شریک ہوئے تھے، لیکن لڑکی جب پول میں گری تو بدقسمتی سے کسی کو بھی اس کی خبر نہ ہو سکی۔

بتایا گیا کہ جس وقت تین سالہ بچی پھسل کر سوئمنگ پول میں گری تھی اس وقت اس کی فیملی کی توجہ ایک اور بچے نے اپنی طرف مبذول کرا رکھی تھی، جس کی وجہ سے بچی کے پانی میں گرنے کا کوئی نوٹس نہ لے سکا۔

ماں کی غفلت، ہولناک حادثے میں جڑواں بچیاں زندگی کی بازی ہار گئیں

حکام کے مطابق گھر کے پائیں باغ میں سوئمنگ پول کے گرد کوئی حفاظتی جنگلہ نہیں تھا، جب کافی دیر بعد بچی کو پانی سے نکالا گیا تو ایک پڑوسی نرس نے موقع پر آ کر طبی عملہ پہنچنے تک بچی کا سی پی آر (سانس بحال کرنے کا طریقہ کار) کیا، تاہم جب طبی عملہ پہنچا تو بچی بے حس و حرکت تھی۔ جس پر اسے فوراً اسپتال پہنچایا گیا تاہم وہ چند گھنٹے بعد مر گئی۔

حکام نے واقعے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ لوگوں کو یہ یاد دلانے کا مناسب موقع ہے کہ ایسی پارٹیوں میں پانی پر کسی ایک شخص کی ذمہ داری لگانی چاہیے، تاکہ وہ مسلسل اس پر نگاہ رکھ سکے، کیوں کہ کسی بچے کو پانی میں گر کر غائب ہونے میں محض چند سیکنڈز ہی لگتے ہیں۔

حکام نے تحقیقات کے بعد کہا کہ والدین کے خلاف کوئی کریمنل چارجز نہیں لگائے جا رہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں