The news is by your side.

Advertisement

کرونا کی پہلی ویکسین لگوانے والی خاتون کی عوام سے اہم اپیل

لندن: برطانیہ میں کرونا ویکسین کی پہلی خوراک لینے والی 90 سالہ خاتون نے برطانوی عوام سے بڑی اپیل کردی۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق برطانیہ نے بڑے پیمانے پر کورونا ویکسین لگانے کا باقاعدہ آغاز کر دیا ہے جس کے بعد 90 سالہ برطانوی خاتون مارگریٹ کینن ویکسین کی خوراک لینے والی دنیا کی پہلی خاتون بن گئی ہیں۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ویکسین کا ٹیکہ لگوانے والی خاتون نے عوام سے اپیل کی کہ وہ آگے بڑھیں اور ویکسین لگوائیں تاکہ ہم تباہ کن بیماری کو شکست دے سکیں۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ مارگریٹ نے اپنی 91ویں سالگرہ سے ٹھیک ایک ہفتہ قبل ویکسین لگوائی۔ شمالی آئرلینڈ سے تعلق رکھنے والی خاتون کو فائزر اور بائیو این ٹیک کی مشترکہ جدوجہد سے تیار ہونے والی ویکسین وسطی انگلینڈ کے مقامی اسپتال میں بذریعہ انجکشن دی گئی۔

مزید پڑھیں: تاریخ رقم: برطانیہ ویکسین استعمال کرنے والا دنیا کا پہلا ملک بن گیا

ویکسین لگوانے کی ویڈیو بھی ریکارڈ کی گئی جس کے بعد خاتون کو اسپتال سے نکلتے ہوئے بھی دیکھا جاسکتا ہے۔

مارگریٹ کا کہنا تھا کہ ’میں ویکسین لگوانے اس لیے گئی کیونکہ یہ مفت تھی اور دوسرا یہ میری زندگی کا قیمتی ترین لمحہ تھا‘۔ انہوں نے ویکسین کے حوالے سے شک و شبہات رکھنے والوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ’جب میں ویکسین لگوا سکتی ہوں تو آپ بھی لگوا سکتے ہیں‘۔

کینن کا کہنا تھا کہ ’ہم سب کو آگے بڑھ کر خود ہی ویکسین لگوانا ہوگی تاکہ اس تباہ کن وبا کو شکست دے سکیں، میں خوراک لینے کے بعد اب اپنے گھر والوں کے ساتھ وقت گزاروں گی‘۔

Comments

یہ بھی پڑھیں