The news is by your side.

Advertisement

لاہور: بابا گرو نانک کے 550 ویں جنم دن کے موقع پر عالمی کنونشن

لاہور: بابا گرو نانک کے 550 ویں جنم دن کے موقع پر منعقدہ کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور کا کہنا تھا کہ پاکستان میں تمام اقلیتی برادری کو یکساں حقوق حاصل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق بابا گرو نانک کے 550 ویں جنم دن کے موقع پر لاہور میں کنونشن منعقد ہوا۔ کنونشن میں گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور اور وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان نے شرکت کی۔

گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پہلا موقع ہے کہ گورنر ہاؤس میں عالمی کنونشن ہو رہا ہے، کانفرنس کا پہلا پیغام ہے پاکستان میں تمام مذاہب کے لوگ آزاد ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حضور محمد ﷺ نے امن اور بھائی چارے کا پیغام دیا، پاکستان میں تمام اقلیتی برادری کو یکساں حقوق حاصل ہیں۔ اقلیتی برادری کو تحفظ دینا ہماری حکومت کی اولین ترجیح ہے۔

گورنر پنجاب کا کہنا تھا کہ بابا گرو نانک کے نام پر بننے والی یونیورسٹی عالمی معیار کی ہوگی، بابا گرو نانک یونیورسٹی میں تمام مذاہب پر پی ایچ ڈی کروائی جائے گی۔ صرف سکھوں ہی نہیں تمام مذاہب کے لوگوں کی زمینوں پر قبضے ہوئے ہیں، ہم ایک ایک انچ زمین قبضہ گروپوں سے واگزار کروائیں گے۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں آمد پر سکھ بھائیوں کو خوش آمدید کہتی ہوں، پاکستان کا چپہ چپہ سکھ بھائیوں کا خیر مقدم کرتا ہے، سکھ بھائیوں کی آمد ایک اہم موقع ہے۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ وزیر اعظم کا کرتار پور راہداری کھولنے کا اقدام وسیع تر وژن کا عکاس ہے، ہر طرح کے بنیادی حقوق کا تحفظ ہمارا مقصد ہے۔ وزیر اعظم عمران خان مذہبی ہم آہنگی کو فروغ دے رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مظلوم کشمیری سکھ برادری کو اپنی طاقت سمجھتے ہیں، سکھ برادری دنیا بھر میں مظلوم کشمیریوں کی آواز بنیں گے، سکھ بڑے اہم موقع پر پاکستان آئے ہیں۔ انتہا پسندی کی سوچ جس بھی صورت میں ہو ختم کریں گے۔

معاون خصوصی نے کہا کہ بھارت میں اقلیتوں کے ساتھ جو سلوک ہو رہا ہے اسے دنیا کے سامنے لائیں گے، مقبوضہ کشمیر کے لوگ سکھ برادری کو اپنی طاقت سمجھتے ہیں۔ یقین رکھتے ہیں سکھ برادری مظلوم کشمیریوں کی طاقت اور آواز بنے گی۔ لاہور سکھ برادری کا گھر ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ سکھوں کو مقدس مقامات پر تمام سہولتیں فراہم کریں گے، سکھ بار بار پاکستان آئیں اور پاکستان کی دنیا بھر میں سفارتکاری کریں۔ سب جانتے ہیں کہ امن کا دشمن کون ہے؟ ہم پر حملہ کیا گیا لیکن پائلٹ واپس بھیجنا امن کو ایک اور موقع دینا تھا۔ کشمیر میں جاری قتل ختم نہ ہوا تو پاکستان خاموش نہیں رہے گا۔

خیال رہے کہ پاکستان جذبہ خیر سگالی اور مذہبی ہم آہنگی کو فروغ دینے کے لیے کرتار پور راہداری کا راستہ کھول چکا ہے، جس سے سکھ افراد کو بے حد آسانی ہوجائے گی۔ اس سے قبل دفتر خارجہ کی جانب سے بھی کہا جاچکا ہے کہ گرو نانک کے 550 ویں جنم دن پر یادگاری ٹکٹ جاری کیا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں