The news is by your side.

Advertisement

آئندہ  بجٹ میں سگریٹ اور میٹھے مشروبات پر ہیلتھ ٹیکس لگانے کی منظوری

تمباکونوشی سے پاکستان میں سالانہ ایک لاکھ60 ہزار سے زائد اموات ہوتی ہیں

اسلام آباد : آئندہ  بجٹ میں سگریٹ اورمیٹھےمشروبات پر ہیلتھ ٹیکس لگانے کی منظوری دے دی گئی، ڈاکٹر ظفرمرزا نے کہا چوں کو تمباکو نوشی سے روکنے  کے لیے سگریٹ کی قیمت بڑھانی ضروری تھی۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت ایک تاریخی اور انقلابی اقدام اٹھاتے ہوئے آئندہ  بجٹ میں سگریٹ اورمیٹھے مشروبات پر ہیلتھ ٹیکس لگانے کی منظوری دے دی۔

معاون خصوصی ظفرمرزا نے کہا وفاقی کابینہ نے ہیلتھ ٹیکس کی منظوری دے دی ہے، ہیلتھ ٹیکس سے حاصل آمدن صحت کے شعبے پر خرچ کی جائے گی ، 20 سگریٹوں کی ڈبی پر10 روپے ٹیکس، 250 ملی لیٹر کے مشروبات پر ایک روپے ٹیکس لگایا جارہا ہے۔

ظفرمرزا کا کہنا تھا ہیلتھ ٹیکس لگانے سے 30 ارب روپے سالانہ وصولی جبکہ شوگری مشروبات پر ٹیکس سےتقریباً 8 ارب روپے سالانہ متوقع ہے۔

معاون خصوصی نے کہا معاشی مشکلات کے باوجود ٹیکس وزیر اعظم کا صحت پرعزم کا اظہار ہے، بچوں کو تمباکو نوشی سے روکنے کے لیے سگریٹ کی قیمت بڑھانی ضروری تھی۔

ظفر مرزا کا کہنا تھاملک میں ڈیڑھ کروڑ سے زائد افراد تمباکو کا استعمال کرتے ہیں ، تمباکو نوشی سے پاکستان میں سالانہ ایک لاکھ60 ہزار سے زائد اموات ہوتی ہیں چھ سے 15سال کی عمر کے 1200 بچے روز تمباکو نوشی شروع کرتے ہیں۔

اس سے قبل حکومت کی جانب سے انسداد تمباکو نوشی اور تمباکونوشی کی حوصلہ شکنی کیلئے ٹیکسیشن ریفارمز لانے کا فیصلہ کیا گیا تھام فیصلہ وزارت قومی صحت،وزارت اخزانہ کی مشاورت سےکیا گیا۔

مزید پڑھیں :  سگریٹ پینے والوں پر 30 سے 50 ارب روپے کا اضافی ٹیکس لگانے کا فیصلہ

وزیراعظم نے ہدایت کی انسداد تمباکو کے لئے ٹھوس اقدامات کیے جائیں جبکہ تمباکو پر سخت ترین ٹیکس اصلاحات کی منظوری بھی دے دی گئی۔

وزیر اعظم کے معاون خصوصی بابر عطا نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بتایا مشیرصحت ظفرمرزا نے انسداد تمباکو نوشی کیلئے جامع پلان پیش کردیا، آئندہ بجٹ میں تمباکو نوشی کی روک تھام کیلئے ٹیکس لگایا جائے گا، تمباکو سے منسلک اشیا کی قیمت میں اضافے سے استعمال کی حوصلہ شکنی ہوتی ہے۔

بابر بن عطا نے کہا ٹیکس سے تیس سے پچاس ارب روپےکااضافی ریوینیوحاصل ہوگا، ٹیکس مد میں حاصل رقم صحت انصاف کارڈکیلئےاستعمال ہو گی ۔

وزیر اعظم کے معاون خصوصی کا کہنا تھا وزیراعظم کی ہدایت پرٹیکس فنانس بل میں شامل کیاجائے گا ، پاکستان میں اموات کی سب سےبڑی وجہ تمباکو نوشی  ہے، ایک لاکھ60 ہزار لوگ تمباکو کے استعمال کے باعث لقمہ اجل بن جاتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں