The news is by your side.

Advertisement

نریندرمودی کی آبائی ریاست گجرات میں ہنگامے پھوٹ پڑے

گجرات : بھارتی وزیراعظم نریندرمودی کی آبائی ریاست گجرات میں ہنگامے پھوٹ پڑے، مودی مخالف ریلی نکالنے والے نوجوان ہاردک پٹیل کی گرفتاری کے بعدپولیس اورمظاہرین میں جھڑپیں ہوئیں، متعددعلاقوں میں کرفیولگا دیا گیا۔

بھارتی وزیرِاعظم نریندرمودی کی آبائی ریاست گجرات میں ہزاروں مسلمانوں کو انتہاء پسند ہندوؤں نے شہید کردیا لیکن اس بار معاملہ مختلف ہے، پٹیل برادری کو تعلیم اور ملازمتیں فراہم کرنے کا مطالبہ کرنے والے ایک نوجوان ہاردک پٹیل نے مودی کے خلاف آواز بلند کی تو ہلچل مچ گئی۔

ہاردک پٹیل کو گرفتار کرلیا گیا لیکن ہزاروں لوگوں کے احتجاج پر رہا کرنا پڑا، مختلف علاقوں میں پولیس اورمظاہرین میں شدید جھڑپوں کے بعد کرفیولگا دیا گیا، پٹیل برادری نے آج گجرات میں ہڑتال کا اعلان کیا ہے۔

ہاردک پٹیل کا کہنا ہے مودی سرکار کے دن گنے جاچکے ہیں، ہزاروں مسلمانوں کے قاتل نریندرمودی کوان کے اپنے آبائی شہر میں لینے کے دینے پڑگئے کیونکہ سامنے بے بس اور مجبور مسلمان نہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں