The news is by your side.

Advertisement

حرمین قتل کیس: مرکزی ملزم سانگھڑ میں گرفتار ہو گیا

سانگھڑ: کراچی کے علاقے ملیر، شاہ لطیف ٹاؤن میں ننھی بچی حرمین کے قتل واقعے کا مرکزی ملزم سانگھڑ میں گرفتار ہو گیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں ملیر شاہ لطیف میں ڈکیتی کے دوران فائرنگ سے ایک بچی حرمین کی جان چلی گئی تھی، واقعے کے مرکزی ملزم شبیر جھکڑو کو اندرون سندھ گرفتار کر لیا گیا۔

ایس ایس پی سانگھڑ ڈاکٹر فرخ نے بتایا کہ قتل میں ملوث مفرور ملزم شبیر جھکڑو کو سانگھڑ پولیس نے شہدادپور میں مقابلے کے بعد زخمی حالت میں گرفتار کیا، زخمی ملزم کو شہدادپور کے سرکاری اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔

کراچی: ننھی حرمین کے ساتھ کیا ہوا تھا؟ دل دہلا دینے والی فوٹیج سامنے آ گئی

ایس ایس پی کے مطابق کراچی میں ملزم شبیر نے ساتھیوں کے ہمراہ دکان میں واردات کی تھی، ملزم نے فرار ہوتے ہوئے شاہراہ پر اندھا دُھند فائرنگ کی تھی، جس کی زد میں آ کر کم سِن بچی حرمین زخمی ہوئی تھی جو بعد ازاں قریبی اسپتال کے عملے کی سنگین غفلت کے باعث جاں بحق ہو گئی تھی۔

حرمین قتل کیس : ملزمان کون ہیں؟ کہاں سے آئے، تفصیلات مل گئیں

ایس ایس پی نے بتایا کہ واردات کے ایک ملزم موقع پر ہی زخمی حالت میں گرفتار ہوا تھا، جب کہ 2 فرار ہو گئے تھے، جن میں سے ایک ملزم کو گرفتار کر لیا گیا ہے، جب کہ دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لیے علاقے میں سرچ آپریشن کیا جا رہا ہے۔

واضح رہے کہ کراچی میں گرفتار زخمی ملزم پیار علی نے پولیس کو بتایا تھا کہ میرا تعلق سانگھڑ سے ہے، جب کہ اس کے دیگر 5 ساتھیوں کا تعلق شہداد پور سے ہے، جن میں پیرو، گلو، نعیم، اکبر اور حق نواز دو دو شامل ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں