spot_img

تازہ ترین

بانی پی‌ ٹی آئی نے صدر کے لیے کِسے نامزد کیا؟ نام سامنے آگیا

اسلام آباد : سنی اتحاد کونسل کی جانب سے...

ملک کا اگلا وزیراعظم کون ؟ فیصلہ کل ہوگا

اسلام آباد :پاکستان کے نئے وزیراعظم کا انتخاب کل...

کراچی میں بارش کے بعد سردی مزید بڑھ گئی

شہر قائد میں گزشتہ روز ہونے والی بارش کے...

کراچی میں موسلا دھار بارش کا کوئی امکان نہیں، چیف میٹرولوجسٹ

چیف میٹرولوجسٹ سردار سرفراز نے کہا ہے کہ کراچی...

ایاز صادق قومی اسمبلی کے اسپیکر منتخب

مسلم لیگ ن کے سردار ایاز صدیق قومی اسمبلی...

ہندوتوانظریہ پرستوں کے مظالم کی رپورٹنگ کرنے والی ڈیٹا ویب سائٹ انتخابات سے قبل بلاک

ہندوتوانظریہ پرستوں کےمظالم کی رپورٹنگ کرنیوالی ویب سائٹ’’ہندوتوا واچ‘‘کو انتخابات سے قبل بلاک کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق انتخابات میں کامیابی کی خواہشمند مودی سرکار میڈیا سنسر شپ میں سرگرم ہیں، بھارتی ریاست میں ہندوتوا نظریہ پرستوں کے مظالم کی رپورٹنگ کرنے والی ڈیٹا ویب سائٹ ہندوتوا واچ کو انتخابات سے قبل بلاک کردیا گیا اور ان کا ایکس اکاؤنٹ بھی بند کردیا۔

الجزیرہ نے بتایا کہ انتخابات سے 2 ماہ قبل بھارت میں میڈیاسنسرشپ کےخدشات بڑھ گئےہیں، مودی سرکار نے بھارت میں مذہبی اقلیتوں کیخلاف نفرت انگیز جرائم کو دستاویزکرنے والی ویب سائٹ اور اکاؤنٹ بلاک کردیا

عرب ٹی وی کے مطابق اقلیتی اور پسماندہ برادریوں پر مظالم کی رپورٹنگ کیلئے امریکا سے ہینڈل ہونیوالی ایک آزاد تحقیقی ڈیٹا ویب سائٹ ہے، بھارت میں ہندوتوا واچ کی ویب سائٹ کوبلاک کرنا’’کشمیر میں میڈیاکی مکمل تباہی‘‘ کیلئےایک اور ہتھکنڈا ہے۔

ہندوتواواچ کیساتھ مودی سرکارنےملک میں نفرت انگیزتقاریرکی رپورٹنگ کرنیوالی ویب سائٹ انڈیاہیٹ لیب کوبھی بلاک کردیا اور ہندوتوا واچ کے بانی کشمیری صحافی کو مودی کےسرکاری عہدیداروں نےویب سائٹ کوبلاک کرنےکی دھمکیاں دیں۔

الجزیرہ کا کہنا تھا کہ مودی سرکارنےمتنازعہ آئی ٹی ایکٹ کےتحت ویب سائٹس کوبلاک کرنےکےلیےنوٹس جاری کیے،مودی حکومت کی آزاد صحافت اورتنقیدی آوازوں کودبانےکی ایک تاریخ موجود ہے۔

ستمبر2023 میں ہندوتوا واچ اور انڈیا ہیٹ لیب نے مشترکہ طور پر مسلمانوں کیلئے نفرت انگیز تقریر پر ایک رپورٹ شائع کی ، رپورٹ میں مسلمانوں کیلئے نفرت انگیز تقریرکے255سےزیادہ دستاویزی واقعات کاتجزیہ کیا گیا، جن میں80فیصدواقعات مودی کی بی جے پی کی حکومت والی ریاستوں میں رونما ہوئے۔

عیاں ہے کہ مودی سرکارآمرانہ حکومت ہے جو کسی بھی طرح کےآزادانہ نقطہ نظرکو خاموش کرادیتی ہے۔

Comments

- Advertisement -