The news is by your side.

برطانوی بادشاہ چارلس کے تاج میں تبدیلی کی وجہ سامنے آگئی

لندن : برطانیہ کے نئے بادشاہ چارلس سوم کو مرحومہ ملکہ برطانیہ کے زیر استعمال تاج پہنایا جائے گا، تاج پوشی کی یہ شایان شان تقریب 6مئی 2023کو منعقد ہوگی۔

غیرملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق کنگ چارلس سوم کے لیے 17ویں صدی کے تاریخی تاج میں تبدیلی کی جائے گی۔

بکنگھم پیلس سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ سینٹ ایڈورڈ کراؤن کے سائز میں تبدیلی کے لیے اسے ٹاور آف لندن سے ہٹا دیا گیا ہے۔ یہ تاج 6 مئی 2023 کو شاہ چارلس کو پہنایا جائے گا۔

خیال رہے کہ اس تاج کا وزن 2.23 کلوگرام ہے اور یہ 22 قیراط سونے سے بنایا گیا ہے۔ اس کی گولائی 66 سینٹی میٹر اور اونچائی 30 سینٹی میٹرہے جب کہ اس میں 444 قیمتی نگینے جڑے ہوئے ہیں۔

13ویں صدی سے انگریزوں اور بادشاہوں کی تاج پوشی کے لیے استعمال ہونے والے سینٹ ایڈورڈ کراؤن کے سائز کے لیے لندن ٹاور سے نامعلوم مقام پر منتقلی کو خفیہ رکھا گیا ہے۔

موجودہ سینٹ ایڈورڈ کراؤن 1661 میں کنگ چارلس دوم کے لیے بنایا گیا تھا کیوں کہ 13 ویں صدی سے زیر استعمال 1649 میں پگھل گیا تھا۔ یہ اس وقت کی بات ہے جب ان کے والد کی پھانسی دی گئی تھی۔

برطانیہ کی سب سے طویل عرصے تک ملکہ رہنے والی الزبتھ دوم کی تاجپوشی 2 جون 1953 کو لندن میں ہوئی اور انھیں یہی تاج پہنایا گیا تھا تاہم موجودہ بادشاہ چارلس کے سر کا سائز قدرے مختلف ہے۔

یہی وجہ ہے کہ سینٹ ایڈورڈ کراؤن کے سائز میں تبدیلی کے لیے منتقل کیا گیا ہے تاکہ 6 مئی 2023 کو ویسٹ منسٹر ایبی لندن میں ہونے والی تاج پوشی کی تقریب میں اسے بادشاہ چارلس کے سر پر رکھا جا سکے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں