The news is by your side.

Advertisement

ایتھوپیا میں انسانی المیہ جنم لینے لگا، لوگ ہجرت پر مجبور

عدیس ابابا: افریقی ملک ایتھوپیا میں فو ج اور شدت پسندوں کے درمیان جاری جھڑپوں کے باعث بڑی تعداد میں لوگوں نے ہجرت شروع کردی ہے۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے مہاجرین (یو این ایچ سی آر) کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ایتھوپیا میں حکومت اور علاقائی فورسز کے مابین جاری خونزیر تنازعے کے باعث ہزاروں مہاجرین ایتھوپیا کی سرحد عبور کرکے سوڈان میں داخل ہورہے ہیں۔

یو این ایچ سی آر کے مطابق تنازعے کی وجہ سے ابھی تک پچیس ہزار سے زائد ایتھوپیائی باشندے ریاست کسلا کے ہمدائیت بارڈر پوائنٹ عبور کرچکے ہیں، ادارے نے متنبہ کیا ہے کہ جب تک یہ تنازعہ کم نہیں ہوتا، شہریوں کی مزید ہلاکتیں ہوسکتی ہیں۔اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے مہاجرین نے مزید بتایا کہ جو لوگ بارڈر کراس کررہے ہیں، ان کے پاس بہت کم مقدار میں ساز وسامان ہیں۔

ایک مہاجر نے غیر ملکی میڈیا سے گفتگو میں بتایا کہ علاقے میں اتنی شدید لڑائی ہورہی ہے کہ جسم کے کپڑے کے علاوہ ہم سب کچھ چھوڑ کر بھاگ آئے، متاثرہ علاقوں میں امدادی ایجنسیاں کھانے پینے کی کچھ چیزیں مہیا کرنے میں کامیاب رہی ہیں، لیکن مزید بہت کچھ کرنے کی ضرورت ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  ایتھوپیا میں بغاوت، آرمی چیف فائرنگ سے ہلاک، بغاوت ناکام

واضح رہے کہ افریقی ملک ایتھوپیا میں لڑائی نومبر کے اوائل میں اس وقت شروع ہوئی، جب ایتھوپیا کی وفاقی حکومت نے علاقائی فورسز پر حملے کا الزام عائد کرتے ہوئے اس کے جواب میں فوجی کارروائی کا آغاز کردیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں