The news is by your side.

Advertisement

بھوک کے شکار ممالک میں پاکستان کا11واں نمبر ہے، رپورٹ

گلوبل ہنگر انڈیکس کے مطابق بھوک کا شکار ممالک میں پاکستان بھی شامل ہے جبکہ امن و امان کی خراب صورت حال کے باعث اسی کروڑ افراد خوراک سے محروم ہیں۔

ترقی کی جانب گامزن ملکی معشیت، زر مبادلہ ذخائر تاریخ کی بلند ترین سطح پر اور ایسے ہی بلند و بانگ حکومتی دعوؤں کے ایک ساتھ تلخ حقیقت یہ بھی ہے کہ بھوک کا شکار ممالک میں پاکستان بھی شامل ہے، گلوبل ہنگر انڈیکس میں پاکستان کا نمبر گیارہواں ہے جبکہ بھارت 25 ویں نمبر پر ہے جہاں صورتحال تشویشناک ہے، خوفناک حد تک صورتحال کی فہرست میں افغانستان بھی شامل ہے۔

رپورٹ کے مطابق دنیا میں باون ممالک ایسے ہیں، جن میں جاری مسلح تصادم کے باعث صورتحال تشویشناک ہے اور اسی کروڑ افراد تک پوری خوراک نہیں پہنچ رہی ہے، ان ممالک میں سینٹرل افریقن ریپبلک سرِ فہرست ہے۔

رپورٹ کے مطابق پہلے نمبر پر سینٹرل افریقن ریپبلک، دوسرے پر چاڈ اور تیسرے پر زیمبیا ہے۔

انڈیکس کے مطابق گزشتہ دس سال میں پاکستان میں بھوک کی صورتحال میں چار اعشاریہ چار پوائنٹس کمی آئی ہے تاہم صورت حال ابھی تشویشناک ہے۔

رپورٹ کے مطابق بائیس فیصد پاکستانی غیرمعیاری غذا کا شکار ہیں جبکہ پانچ سال سے کم عمر بچوں کی ایک بڑی تعداد موت کا شکار بھی ہوجاتی ہے، بھارت اور افغانستان بھی اس فہرست میں شامل ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں