The news is by your side.

Advertisement

نااہلی کیس: سپریم کورٹ کا فیصلہ قبول کروں گا، شیخ رشید

راولپنڈی: عوامی مسلم لیگ کے  سربراہ شیخ رشید احمد کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ سے نااہلی کیس کا جو بھی فیصلہ آئے گا اُسے قبول کروں گا امید ہے عدالتی فیصلہ حق و سچ پر مبنی ہوگا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے راولپنڈی میں خطاب کرتے ہوئے کیا، شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ پاکستان کی معیشت کو بچانے کی ضرورت ہے، آج ملک میں ڈالر 122روپے کا ہوگیا اور پاکستانی کرنسی کی دن بہ دن نیچے آتی جارہی ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ اللہ سے امید ہے مستقبل کافیصلہ سچائی کے حق میں ہوگا، میرادل کہہ رہا ہے میں عمران خان کے ساتھ آئندہ  حکومت بنانے جارہا ہوں تاکہ چوروں، لٹیروں کو سیاسی دھارے سے باہر نکال سکیں۔

شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ میں حکومت کا بھوکا نہیں،7بار وزیر رہ چکا ہوں، میراشہر راولپنڈی پیچھے رہ گیا یہاں بے روزگاری عروج پر پہنچ چکی اور آج نوجوانوں کے پاس نوکریاں نہیں ہیں۔

عوامی مسلم لیگ کے سربراہ کا کہنا تھا کہ پاکستان کو آگے لےجانامیری زندگی کی آخری کوشش ہے، میں سیاست کے ذریعے ملکی ترقی کے خواہش مند ہوں کیونکہ میرے ساتھ بدمعاشوں کا کوئی گروہ نہیں جبکہ یہ لوگ منشیات فروشوں اور ایفیڈین بیچنے والوں کو حکومت میں لیکرآئے۔

شیخ رشید احمد کا مزید کہنا تھا کہ اپنی زندگی کا آخری الیکشن لڑنے جارہا ہوں اور کوشش ہے کہ راولپنڈی سےمنشیات فروشوں کی نسلوں کا سیاسی طورپر خاتمہ کردوں، المیہ ہے کہ نوازشریف جیسے نالائق لوگ ملک کے لیڈر بنے، انہوں نے میرا مائیک صرف 7 منٹ کے لیے کھولا تو سب منہ تکتے رہ گئے۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان شیخ رشید احمد کی نااہلی کے خلاف درخواست دائر ہے جس میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ انہوں نے کاغذات نامزدگی میں زرعی زمین ظاہر نہیں کی لہذا وہ صادق اور امین نہیں رہے، درخواست پر عدالت عالیہ نے فیصلہ محفوظ کرلیا جسے کل یعنی 13 جون کو سنایا جائے گا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں