The news is by your side.

Advertisement

ٹرمپ نے امریکیوں کو چینی کمیونٹی کے خلاف بری زبان استعمال کرنے سے رو ک دیا

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ موجودہ بحرانی صورت حال سے بہت سے سبق سیکھ رہے ہیں، ایسا وبائی بحران ماضی میں کبھی دیکھنے کو نہیں ملا، مجھے ورثے میں ٹوٹا ہوا سسٹم ملا۔

ان خیالات کا اظہار امریکی صدر نے کرونا ٹاسک فورس کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا، انھوں نے کہا کہ لوگ ڈپریشن کا شکار ہیں، نوکریاں ختم ہو رہی ہیں، باہر نہیں جا سکتے، بیماری کے ختم ہونے کے بعد بھرپور طریقے سے واپسی کریں گے۔

ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ایشین امریکی کمیونٹی کے خلاف بری زبان استعمال کی جا رہی ہے، چینی امریکی کمیونٹی کے خلاف اس طرح کی باتیں مناسب نہیں، یہ وقت متحد ہونے کا ہے الزام تراشی کا نہیں، ورکرز کی زندگیوں کا خیال رکھنے کی کوشش کر رہے ہیں، کارپوریشنز اور چھوٹے کاروباروں کو تحفظ فراہم کریں گے۔

سوڈان میں کرفیو، جنوبی افریقہ، نیوزی لینڈ، قبرص میں لاک ڈاؤن

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر ڈیبورا برکس نے کہا کہ اپنے آپ کو لوگوں سے دور رکھیں، نہیں معلوم یہ وائرس کن کن افراد میں موجود ہے، کرونا ویکسین کی تیاری کے لیے ایف ڈی اے کام کر رہی ہے۔

خیال رہے کہ امریکا کی 16 ریاستوں نے لوگوں کو گھروں میں رہنے کا حکم جاری کر دیا ہے۔ امریکا میں وائرس سے ہلاکتوں میں تیزی کے ساتھ اضافہ جاری ہے، گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران 29 افراد ہلاک ہو چکے ہیں جس سے ہلاک افراد کی تعداد 582 ہو گئی۔ جب کہ 46,145 افراد وائرس سے متاثر ہو چکے ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں