The news is by your side.

Advertisement

حزب اللہ کی تیسری سرنگ تباہ کردی، اسرائیل کا دعویٰ

تل ابیب : غاصب صیہونی فورسز نے لبنانی مزاحمتی تنظیم حزب اللہ کی تیسری زیر زمین سرنگ کو دریافت کرکے تباہ کرنے کا دعویٰ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق فلسطین پر قابض صیہونی ریاست اسرائیل کی افواج نے ناجائز ریاست کے لبنان سے متصل سرحدی علاقے میں اسرائیل کے خلاف مسلح کارروائیوں کےلیے حزب اللہ کی جانب سے کھودی گئی ایک اور سرنگ دریافت ہونے کا انکشاف کیا ہے۔

اسرائیلی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ اسرائیلی دفاعی افواج (آئی ڈی ایف) کا لبنان سے اسرائیل میں داخل ہونے کے لیے بنائی گئیں ان زیر زمین سرنگوں کو تباہ کرنے کے لیے آپریشن جاری ہے۔

غیر ملکی میڈیا کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فورسز نے تیسری سرنگ کے محل وقوع نہیں بتایا تاہم ان کا کہنا تھا کہ مذکورہ سرنگ سے کوئی خطرہ لاحق نہیں تھا۔

اسرائیلی فورسز کا کہنا تھا کہ حزب اللہ کی جانب سے جاری کردہ نقشے کے تحت مزاحمتی تنظیم نے جنوبی لبنان کے پانچ علاقوں کافرکلا، میس الجبیل، بلیدا، رامیۃ، علما الشعیب سے سرنگیں کھودیں تھیں۔

اسرائیلی حکام کا خیال ہے کہ لبنان اور اسرائیل کے درمیان 130 کلومیٹر طویل سرحد پر اسلامی مزحمتی تنظیم حزب اللہ نے درجنوں زیر زمین سرنگیں بنائی ہوئی ہیں۔

صیہونی حکام کا کہنا ہے کہ حزب اللہ کی کھودی ہوئی سرنگوں پر اب اسرائیل کا قبضہ ہے لہذا لبنان کی طرف کوئی بھی سرنگ میں داخل ہوا تو وہ اپنی جان کو خطرے میں ڈالے گا۔

اسرائیلی فورسز کے ترجمان نے کہا تھا کہ لبنان سے اسرائیل میں داخل ہونے کے لیے کھودی گئی سرنگوں کی ذمہ دار لبنانی حکومت ہے کیوں کہ اسے لبنانی حدود سے کھودا گیا ہے اور یہ اقوام متحدہ کی قرار داد 1701 کی کھلی خلاف ورزی ہے اور اسرائیلی خود مختاری پر حملہ ہے۔

یاد رہے کہ اسرائیلی فورسز نے رواں ماہ کے اوائل میں ’شمالی ڈھال‘ کے نام سے لبنان کی مزاحمتی تنظیم حزب اللہ کی جانب ے اسرائیل پر حملوں کے لیے کھودی گئی سرنگوں کو بند کرنے کےلیے آپریشن کا آغاز کیا تھا۔

مزید پڑھیں : حزب اللہ کی ایک اور سرنگ تباہ کردی، اسرائیل فورسز کا دعویٰ

یاد رہے کہ دو روز قبل غاصب صیہونی ریاست اسرائیل نے حزب اللہ کی دو سرنگیں تباہ کرنے کا دعویٰ کیا تھا.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں