The news is by your side.

Advertisement

دیگرصوبوں سے ڈیپوٹیشن پر آئے اساتذہ کو بڑا ریلیف مل گیا

اسلام آباد : ہائیکورٹ نے ڈیپوٹیشن پر آئے اساتذہ کو واپس بھیجنے سے روکتے ہوئے اساتذہ کوواپس صوبوں میں بھیجنے کا وفاقی نظامات تعلیمات کا فیصلہ معطل کردیا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آبادہائی کورٹ نے دیگر صوبوں سے ڈیپوٹیشن پر آئے اساتذہ کو بڑا ریلیف دیتے ہوئے اساتذہ کوواپس بھیجنے سے روک دیا اور اساتذہ کو واپس صوبوں میں بھیجنے کا وفاقی نظامات تعلیمات کا فیصلہ معطل کردیا۔

بڑی تعداد آئی خواتین اساتذہ کمرہ عدالت میں خوشی سےرونےلگیں، آرڈر معطلی کےبعد اساتذہ کے پاس اسکول جانے کاراستہ کھل گیا ہے۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے 11دسمبر 2020 کا فیصلہ معطل کرتے ہوئے کہا بادی النظر میں وفاقی نظامت تعلیمات کا حکمنامہ برقرار نہیں رہ سکتا۔

عدالت نے ڈی جی وفاقی نظام تعلیمات 9مارچ کو طلب کرتے ہوئے کہا وفاقی نظام تعلیمات بتائیں کہ ایسا حکمنامہ کیوں جاری کیا گیا، پالیسی کےمطابق ڈیپوٹیشن پرآئے اساتذہ کل سےاسکول جاسکیں گے۔

عدالت نے اساتذہ کو صوبوں میں واپسی کے احکامات معطل کرتے ہوئے حکم امتناع جاری کردیا ، چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہا ڈائریکٹر لیگل وفاقی نظامت تعلیمات کوقانون کاعلم نہیں، ڈائریکٹر لیگل عدالت کو گمراہ کر رہے ہیں، یکطرفہ فیصلوں سے اساتذہ ڈی چوک بیٹھنے ہر مجبور ہوئے۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے آئندہ سماعت پر ڈی جی ذاتی حیثیت میں طلب کرتے ہوئے کہا ڈی جی بتائیں2006 یا پہلے کام کرنے والی اساتذہ کوکیوں دربدر کیا جارہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں