spot_img

تازہ ترین

ملک کے 14ویں صدر کا انتخاب کب ہوگا؟ تاریخ کا اعلان ہوگیا

اسلام آباد : ملک میں نئے صدر مملکت کا...

سندھ اسمبلی کے نو منتخب ارکان نے حلف اٹھالیا

کراچی : سندھ اسمبلی کے 148 نو منتخب ارکان...

مسلم لیگ ن 108 ارکان کے ساتھ قومی اسمبلی کی بڑی جماعت بن گئی

اسلام آباد : مسلم لیگ ن108 ارکان کے ساتھ...

سندھ اسمبلی کے نو منتخب ارکان آج حلف اٹھائیں گے

کراچی : سندھ اسمبلی کے نو منتخب ارکان آج...

بلاول بھٹو نے وزیر اعلیٰ، اسپیکر و ڈپٹی اسپیکر سندھ اسمبلی کے امیدواروں کا اعلان کر دیا

کراچی: چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے...

برطانیہ میں غیرقانونی تارکین وطن کو روانڈا بھیجنے کا فیصلہ

لندن : برطانوی حکومت نے غیرقانونی تارکین وطن کو روانڈا بھیجنے کا فیصلہ کرلیا،اور درخواست منظور ہونے تک انہیں وہیں رکھا جائے گا۔

برطانوی وزیراعظم بورس جانسن ایک منصوبے کا اعلان کرنے والے ہیں جس کے تحت برطانیہ میں سیاسی پناہ کی درخواست دینے والوں کو افریقی ملک روانڈا پہنچا دیا جائے گا۔

اس حوالے سے بورس جانسن کا کہنا ہے کہ برطانوی حکومت غیرقانونی تارکین وطن کو روانڈا بھیجے گی، روانڈا جانے والوں کو وہاں کی مستقل رہائش دی جائے گی اور انہیں وہاں سے اپنے ملک واپس جانے کی سہولت بھی حاصل ہوگی۔

UK asylum seekers sent to Rwanda? That takes punishment of fellow humans to  a new level | Enver Solomon | The Guardian

انہوں نے کہا کہ اس سال 60ہزار مہاجرین کے برطانیہ آنے کا خدشہ ہے، ابتدائی طور پر برطانوی حکومت اس منصوبے پر 120ملین پاؤنڈ خرچ کرے گی۔

بورس جانسن کا کہنا تھا کہ برطانیہ روزانہ 5 ملین پاؤنڈز مہاجرین کی رہائش پرخرچ کرتا ہے، دوسری جانب حقوق انسانی کی تنظیموں نے اس فیصلے پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ  روانڈا منصوبہ غیر انسانی، ظالمانہ اور غیراخلاقی ہے۔

UK announces plan to send asylum seekers to Rwanda, draws criticism

واضح رہے کہ بورس جانسن نے اپنے اس مجوزہ منصوبے کا اعلان گزشتہ روز ملک کے جنوب مشرقی شہر کینٹ میں اپنے ایک خطاب میں کیا۔ ان کے اس منصوبے کا مقصد برطانیہ کو درپیش غیر قانونی تارکین وطن کی آمد کے مسئلے سے نمٹنا ہے۔

جانسن کی پارٹی کے بہت سے ارکان کو اس مسئلے پر بہت زیادہ تحفظات ہیں۔ خیال رہے کہ کینٹ ہی وہ شہر ہے جہاں گزشتہ برس رودباد انگلستان یا انگلش چینل کو چھوٹی کشتیوں کے ذریعے عبور کرکے سب سے زیادہ تعداد میں سیاسی پناہ کے متلاشی پہنچے تھے۔

Comments

- Advertisement -