جمعہ, جون 21, 2024
اشتہار

آئی ایم ایف کا پنشن پر ٹیکس کیلئے قانون سازی کا مطالبہ، ذرائع

اشتہار

حیرت انگیز

اسلام آباد : پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان مذاکرات حتمی مراحل میں داخل ہوگئے، نئے پروگرام پر پالیسی مذاکرات آج سے شروع ہوں گے۔

اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ نئے قرض پروگرام کے لیے پنشن میں اصلاحات کرنا ہوں گی، آئی ایم ایف نے زور دیا ہے کہ ایک لاکھ روپے سے زائد ماہانہ پنشن پر ٹیکس عائد کیا جائے۔

ذرائع کے مطابق امرا کی پنشن پر ٹیکس عائد کرنے کے لیے ضروری قانونی سازی کی جائے، نئے قرض پروگرام کے لیے سخت معاشی فیصلے کرنا ہوں گے۔

- Advertisement -

ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ پاکستان کے پاس آئی ایم ایف قرض پروگرام کے متبادل کوئی پلان نہیں ہے اس کے لیے اخراجات اور خسارے کو کنٹرول کرنا ہوگا۔

قبل ازیں آئی ایم ایف نے کہا ہے کہ پاکستان مصنوعی طور پر کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم کرنے سے گریز کرے، اس کو اپنی نیٹ انٹرنیشنل انویسٹمنٹ پوزیشن مضبوط کرنا ہوگی، ساتھ ہی بیرونی اثاثے مضبوط اور بیرونی ادئیگیوں پر دباؤ کم کرنے کی بھی ضرورت ہے۔

آئی ایم ایف نے مطالبہ کیا کہ ڈالر کا ایکسچینج ریٹ مارکیٹ کے مطابق اور شرح سود مہنگائی کے حساب سے رکھا جائے، اسٹیٹ بینک مہنگائی کو کنٹرول کرنے کے لیے سخت مانیٹری پالیسی اپنائے۔

یاد رہے کہ آئی ایم ایف کا یہ 24 واں پروگرام ہوگا پاکستان کیلئے جسے اب تک کا سب سے مشکل ترین قرض پروگرام کہا جارہا ہے۔ آئی ایم ایف کی جانب سے پنشن لینے والے افراد پر ٹیکس کا نفاذ ان بہت سی تجاویز میں شامل ہے۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں