The news is by your side.

Advertisement

شوگرملزاسکینڈل، اینٹی کرپشن کی تحقیقات میں اہم انکشافات

لاہور: شوگرملزاسکینڈل کے حوالے سے اینٹی کرپشن کی تحقیقات میں اہم انکشافات سامنے آگئے، پنجاب بھر کی شوگرملز اربوں روپے کی نادہندہ نکلیں۔

تفصیلات کے مطابق شوگرملز اسکینڈل سے متعلق ہونے والی تحقیقات میں کسانوں نے ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب کے سامنے شکایات کے انبار لگا دیے، کین کمشنر پنجاب کے ڈیٹا کے مطابق ایک ارب روپے مل مالکان پر واجب الادا ہیں۔

اینٹی کرپشن پنجاب کو موصول شکایات کے مطابق مل مالکان 3 ارب کے نادہندہ ہیں۔

ڈائریکٹرجنرل(ڈی جی) اینٹی کرپشن پنجاب گوہر نفیس کا کہنا ہے کہ کاشتکاروں کے خلاف زیادہ ظُلم مل مالکان کررہے ہیں، غیرقانونی کٹوتیاں اور کاشتکاروں کو کم ادائیگیاں کی گئیں۔

انہوں نے بتایا کہ مل مالکان کی ریکارڈ سمیت طلبی جاری ہے، مکمل چھان بین کے بعد حقائق قوم کے سامنے رکھیں گے، اسکینڈل کے حوالے سے باریکی سے جائزہ لے رہے ہیں۔

محکمہ اینٹی کرپشن نے پنجاب بھر سے 44 شوگر ملز مالکان کو ریکارڈ سمیت طلب کر لیا

یاد رہے کہ دو روز قبل اینٹی کرپشن پنجاب نے شوگر ملز مافیا کے گرد گھیرا مزید تنگ کرتے ہوئے صوبے بھر سے 44 شوگر ملز مالکان کو ریکارڈ سمیت طلبی کا نوٹس جاری کیا تھا۔

ڈی جی اینٹی کرپشن کا کہنا تھا کہ گنے کے کاشت کاروں کا استحصال ہرگز قبول نہیں، ملز مالکان کے خلاف بڑی تعداد میں شکایات موصول ہو رہی ہیں، پچھلے 2 ہفتوں میں ڈھائی ہزار شکایات موصول ہوئیں، متعین کردہ ریٹ سے کم قیمت کے حوالے سے 1363 شکایات آئیں، کاشت کاروں کو رقم کی عدم ادائیگی سے متعلق 641 شکایات موصول ہوئیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں