ہفتہ, مئی 25, 2024
اشتہار

قمر باجوہ نے چوروں کو اوپر بٹھانے کا تحفہ دیا، عمران خان

اشتہار

حیرت انگیز

تحریک انصاف کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ جب سے قمر باجوہ نے چوروں کو اوپر بٹھانے کا تحفہ دیا تب سے ملکی معاشی حالات سری لنکا سے بھی برے ہوگئے

یہ بات انہوں نے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے کہی انہوں نے کہا کہ کوئی دشمن بھی اس قوم کے ساتھ وہ سلوک نہ کرتا جو باجوہ کرکے گیا، ان چوروں نے اپنے1100ارب روپے معاف کروائے اور ملکی معیشت تباہ کردی،

عمران خان نے کہا کہ گزشتہ روز ملک بھر کے 4 ہزار 200 مقامات پر لوگ گھروں سے باہر نکلے، کبھی ملکی تاریخ میں ایسا نہیں ہوا کیونکہ لوگ کسی خاص شخصیت کے لیے نہیں ملکی آئین کی حفاظت کرنے نکلے۔

- Advertisement -

سابق وزیراعظم نے کہا کہ ملک کا آئین یہ طے کرتا ہے کہ ہر ادارے کا کیا کردار ہے اور ہرانسان کے بنیادی حقوق کیا ہیں، ملک چلتا ہی آئین سے ہے، آئین ختم ہونے کا مطلب ملک کا ختم ہونا ہے،

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ نظریہ ضرورت غلام معاشروں میں آئین کو ختم کرکے آتا ہے، انگریز نے بھی یہاں اپنے لیے الگ اور عوام کیلئے الگ قانون بنا رکھا تھا۔

انہوں نے کہا کہ چیف جسٹس سپریم کورٹ آئین کے ساتھ کھڑے ہیں اور آئین90روز میں الیکشن کا کہتا ہے، اس لیے پی ڈی ایم حکومت کھل کر سپریم کورٹ پر حملے کررہی ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ یہ لوگ آئین توڑنے اور سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف جانے کو تیار ہیں، اس وقت ملک کے 70فیصد لوگوں کے منتخب نمائندے ایوان میں ہی موجود نہیں ہیں۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ چیف جسٹس سجاد علی شاہ ایک دیانت دار چیف جسٹس تھے، سپریم کورٹ پر ڈنڈوں سے حملہ کرکے چیف جسٹس سجاد علی شاہ کو بھگادیا گیا، پیسوں کے بریف کیس سے ججز کو تقسیم کیا گیا اور سجاد علی شاہ کو ہٹادیا گیا۔

عمران خان نے کہا کہ 70کی دہائی میں منتخب وزیر اعظم بھی ڈکٹیٹر کی طرح ملک چلاتا تھا ، اس وقت لوگوں کو مارنے پیٹنے کیلئے ایف ایس ایف بنائی ہوئی تھی، جو الیکشن سے بھی حکومت میں آتے تھے وہ بھی خود کو قانون سے اوپر سمجھتے تھے۔

نواز شریف اور مریم نواز پر تنقید کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ابھی بھی آپ دیکھتے ہیں کہ نواز شریف اور اس کی بیٹی کیا کہتے پھرتے ہیں؟ وہ کہتے ہیں کہ دیکھیں جی نواز شریف سے بڑا غلط ہوگیا اب کیس ختم کرو۔

عمران خان نے کہا کہ وہ ایک بار بھی یہ نہیں بتاتے کہ جس وجہ سے نوازشریف کو ہٹایا گیا وہ پانامہ انٹرنیشنل کا انکشاف تھا، پانامہ کیس میں انکشاف ہوا کہ مہنگے ترین لندن اپارٹمنٹس کی مالکہ مریم نواز ہے۔

انہوں نے کہا کہ دو سال تک عدالتی انکوائری چلی، جے آئی ٹی بنی پھر ثابت ہوا کہ ان کے پاس منی ٹریل ہی نہیں تھی، دبئی میں ملک کا وزیر اعظم نوکری کر رہا ہے اور تنخواہ لے رہا تھا، اس کا کبھی جواب نہیں دیا کہتے ہیں جرأت کیسے ہوئی کسی نے ہمیں سزا دی۔

اس سے قبل سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری کردہ اپنے ایک بیان میں سابق وزیراعظم نے لکھا کہ علی امین کو ایک ماہ حراست میں رکھ کر تشدد کیا گیا لیکن ڈیرہ اسماعیل خان (ڈی آئی خان) نے اس کا تاریخی استقبال کیا۔ فسطائیت کے ذریعے آپ عوام کے دلوں میں سرائیت کرنے والی تحریک کو روک نہیں سکتے۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں