The news is by your side.

مجھے جلسوں سے پہلے تھریٹ لیٹر ملتے تھے، عمران خان

لاہور : پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ مجھے جلسوں سے پہلے تھریٹ لیٹر ملتے تھے،  مجھے کہا گیا کہ جلسے نہ کریں آپ کی جان کو خطرہ ہے، میں سیاست کے لیے نہیں قوم کی حقیقی آزادی کے لیے نکلا ہوں، غلامی کی زندگی سے بہتر مرجانا ہے۔

یہ بات انہوں نے حقیقی آزادی مارچ کے شرکاء سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے کہی، انہوں نے کہا کہ اس مارچ میں قوم کو بدلتے دیکھا ہے، تاریخی لانگ مارچ کرنے پر عوام کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں، کبھی پہلے کسی پارٹی نے اس طرح کا مارچ نہیں نکالا۔

چیئرمین عمران خان نے کہا  کہ شہباز شریف نے سینکڑوں لوگ پولیس مقابلوں میں مروائے، میرے نوکروں کو خریدنے کی کوشش کی گئی۔ہماری حکومت کوسازش کے ذریعے گرایا گیا، جب سازش ہوئی تب سے میں میدان میں ہوں، میں نے جو یہ چند ماہ میں دیکھا 26سال کی سیاست میں نہیں دیکھا۔

عمران خان  نے کہا کہ بلاول زرداری ڈھونڈتا پھرے گا کہ اس کے باپ نے چوری کا پیسہ کہاں کہاں چھپا رکھا ہے، جب تک ملک کو حقیقی آزادی نہیں دلاتے ہم رکیں گے نہیں، ہماری قوم کے فیصلے کوئی اور نہ کرے۔

انہوں نے کہا کہ میں پنڈی جانے کی تاریخ کا اعلان کروں گا مجھے معلوم ہے میری زندگی کو وہاں بھی خطرہ ہے لیکن جب تک ہم ملک کوحقیقی آزادی نہیں دلاتے ہم رکیں گے نہیں۔

انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف نے اپنا پیغام پورے ملک میں پہنچایا،7ماہ پہلے حقیقی آزادی کی تحریک شروع ہوئی، مارچ میں خواتین اور بچوں نے شرکت کی، ایک جاگی ہوئی اورباشعور قوم جہدوجہد کررہی ہے،

عمران خان نے کہا کہ تحریک کے دوران ہمارے لوگوں پر ظلم کیے گئے، ہمارے لوگوں نے تحریک کے دوران قربانیاں دیں، شہبازشریف نے کئی سو لگ مقابلوں میں مروائے، عابد باکسر نے ٹی وی پر کہا کہ میرے ذریعے لوگوں کو مروایا گیا۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ ان لوگوں نے25مئی کو جو کچھ کیا وہ کبھی نہیں بھولوں گا، کارکنان کے گھروں پر چھاپے مارے گئے، لوگوں کو جیلوں میں ڈالا، ایف آئی آر کی بارش ہوگئی، ہمارے لوگوں پر تشد دہوا، مقدمے بنائے گئے، ہمیں ڈرانے کے لیے خوف کا ماحول بنایا گیا۔

انہوں نے بتایا کہ میرے نوکروں کو خریدنے کی کوشش کی گئی، شہبازگل کو صرف ایک جملہ کہنے پر تشدد کا نشانہ بنایا گیا، ٹی وی چینل اے آر وائی نیوز کو بند کردیا گیا، اعظم سواتی کو تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے میرے لیے پیغام دیا گیا کہ ایسا بھی ہوگا۔

عمران خان نے کہا کہ مجھ پرقاتلانہ حملہ کیا گیا جس کا مجھے پہلے سے ہی پتا تھا کہ تیاری ہورہی ہے، میں نے جلسوں میں بتایا کہ ان کا پلان کیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں