The news is by your side.

Advertisement

منشیات فروش گروہ بھینسوں کی وجہ سے پکڑا گیا

گجرات : بھارت میں بھینسیں نشے میں دھت ہوگئیں، پولیس نے علاقے میں منشیات کا کاروبار کرنے والے گروہ کو حراست میں لے کر مقدمہ درج کرلیا۔

بھارت کی مغربی ریاست گجرات میں بھینسوں کے ایک ریوڑ کے نشے میں دھت ہو جانے کے بعد پولیس نے غیر قانونی شراب بیچنے والے تین کسانوں کو گرفتار کرلیا ہے۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق پولیس نے جانوروں کے ڈاکٹر کی اطلاع پر تینوں کسانوں کو غیر قانونی شراب فروخت کرنے کے الزام میں گرفتار کیا ہے۔

مقامی پولیس افسر دلیپ سنگھ بلدیو نے بتایا کہ بھینسوں کی عجیب و غریب حرکتوں اور منہ سے جھاگ نکلنے پر مذکورہ کسانوں میں سے ایک نے مقامی جانوروں کے ڈاکٹر کو بلایا تھا۔

ڈاکٹر نے جانوروں کے پانی پینے کی جگہ کا معائنہ کیا تو وہاں انہیں ایک عجیب بو محسوس ہوئی۔

انہوں نے دیکھا کہ پانی الگ رنگ کا تھا جس سے انہیں معلوم ہوا کہ جانوروں کے پانی پینے کی جگہ پر کسانوں نے بوتلیں چھپا رکھی تھیں جن میں سے کچھ ٹوٹ گئی تھیں اور پانی کو آلودہ کر رہی تھیں۔

ڈاکٹر کے اطلاع دینے پر پولیس نے پیر کو فارم پر چھاپہ مارا اور الکوحل کی سو بوتلیں برآمد کی تھیں جن کی مالیت چار سو امریکی ڈالر ہے۔ پولیس نے واقعے میں ملوث تینوں کسانوں کو گرفتار کر لیا ہے۔

گجرات وزیراعظم نریندر مودی کی آبائی ریاست ہے۔ گجرات میں شراب تیار کرنا اور اس کی خرید و فروخت غیر قانونی ہے۔ خلاف ورزی کی صورت میں بھاری جرمانہ عائد ہو سکتا ہے حتیٰ کہ جیل بھی ہو سکتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں