The news is by your side.

جہاز میں دہشت گرد کا لفظ کیوں استعمال کیا ؟ عملے نے مسافر کو گرفتار کرادیا

کولکتہ : جہاز میں سوار مسافر کو مذاق میں دہشت گرد کا لفظ استعمال کرنا مہنگا پڑگیا، عملے نے فوری کارروائی کرتے ہوئے نوجوان کو حراست میں لے لیا۔

تفصیلات کے مطابق کلکتہ سے ممبئی جانے والی پرواز کو اڑان بھرنے سے ساتھ ہی اتار لیا گیا، جس کی وجہ یہ بیان کی گئی ہے کہ جیٹ ایئرویز کے جہاز میں موجود بیس سالہ یوگویدنت پودار نامی مسافر نے اپنے چہرے پر نقاب ڈال کر موبائل فون سے سیلفی لی۔

نوجوان نے  اسے اس کیپشن کے ساتھ لکھا کہ ’’فلائٹ میں دہشت گرد ‘‘ میں خواتین کے دل تباہ کرتا ہوں ‘‘ یہ تصویر وہ اسنیپ چیٹ پر اپنے ایک دوست کو بھیجنے ہی  والا تھا کہ یہ کام کرتے ہوئے اس کے پاس بیٹھے دوسرے مسافر نے دیکھ لیا ۔

مسافر نے خطرہ محسوس کرتے ہوئے اس کی اطلاع فوری طور پر جیٹ ایئرویز کے عملے کو جا کردی، عملے نے فوری کارروائی کرتے ہوئے مذکورہ نوجوان کو اپنی تحویل میں لے لیا۔

یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب طیارہ پرواز کیلئے اڑان بھر رہا تھا، اس لیے کپتان کو واپس رن وے پر آنا پڑا تاکہ ملزم کو پولیس کے حوالے کیا جاسکے۔

اس حوالے سے ایئر پورٹ حکام کا کہنا ہے کہ ملزم یوگویدنت پودار کو گرفتار کرنے کہ وجہ یہ ہے کہ اسے طیارے میں ایسی زبان استمعال کرتے ہوئے پایا گیا جسے سکیورٹی کیلئے خطرہ سمجھا جاتا ہے۔

دوسری جانب بیس سالہ یوگویدنت پودار کے والد کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ میرے بیٹے نے محض مذاق میں یہ بات لکھی۔

واضح رہے کہ کولکتہ سے ممبئی جانے والے اس طیارے میں سو سے زائد مسافر سوار تھے، جنہیں اس تمام صورتحال کے پپیش نظر فلائٹ میں ڈیڑھ گھنٹہ تاخیر کا سامنا کرنا پڑا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں