The news is by your side.

Advertisement

کرونا لاک ڈاؤن : پیدل گھر جانے والی لڑکی راستے میں ہی دم توڑ گئی

نئی دہلی : لاک ڈاؤن کی وجہ سے سیکڑوں میل دور پیدل اپنے گھر جانے والی 12سالہ لڑکی راستے میں دم توڑ گئی، پولیس نے لاش پوسٹ مارٹم کیلئے اسپتال منتقل کردی۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی ریاست حیدرآباد کے علاقے تلنگانہ کے بیجاپور سے اپنے گھر چھگ جانے کے لئے پیدل روانہ ہونے والی ایک بارہ سالہ لڑکی کی گزشتہ روز راستے میں ہی دم توڑ گئی۔ کورونا وائرس کے پیش نظر ملک بھر میں لاک ڈاؤن کی وجہ سے لوگ دوسری ریاست سے اپنی ریاست پیدل نقل مکانی کرنے پر مجبور ہیں۔

اسی سلسلے میں چھتیس گڑھ کی رہائشی ایک بارہ سالہ لڑکی تلنگانہ کے بیجاپور سے اپنے گھر چھگ پیہدل جارہی تھی کہ راستے میں ہی بظاہر تھکان کی وجہ سے اس کی موت واقع ہوگئی۔

اس حوالے سے بیجاپور کے ہیلتھ آفیسر سی ایچ ایم او نے کہا کہ ابھی اس لڑکی کی پوسٹ مارٹم رپورٹ دیکھنا باقی ہے لیکن ایسا لگتا ہے کہ لڑکی کی موت تھکن، الیکٹرو لائٹ، عدم توازن یا جسم میں پانی کے کمی کی وجہ سے ہوئی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ لڑکی کے ساتھ 11 افراد اور بھی تھے جو مرچ کے کھیتوں میں کام کرنے کے لئے تلنگانہ گئے تھے لیکن لاک ڈاؤن کی وجہ گھر جانے کا کوئی ذریعہ نہیں ہونے کی وجہ سے تمام افراد پیدل ہی گھر کے لے روانہ ہوئے تھے۔

پولیس کے مطابق لڑکی کی لاش کو پوسٹ مارٹم کیلئے متعلقہ اسپتال بھیج دیا گیا ہے جس کی رپورٹ آنے کے بعد مزید کارروائی کی جائے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں