The news is by your side.

Advertisement

بھارت کا کلبھوشن یادیو کی سزا کیخلاف نظرِثانی اپیل دائر کرنے سے انکار

اسلام آباد : بھارت نے پاکستان میں گرفتار اور سزا یافتہ خفیہ ایجنسی ‘را’ کے ایجنٹ کلبھوشن یادیو کی سزا کے خلاف نظرِ ثانی اپیل دائر کرنے سے انکار کردیا ہے، سابق اٹارنی جنرل اشتراوصاف نے کہا بھارت کا انکار حیران کن ہے۔

تفصیلات کے مطابق بھارت نے سزا یافتہ خفیہ ایجنسی ‘را’ کے ایجنٹ کلبھوشن یادیو کی سزا کیخلاف نظرِثانی کی اپیل دائرکرنے سے انکار کردیا ، اس حوالے سے سابق اٹارنی جنرل اشتراوصاف نے کہا جب پاکستان کی جانب سےآرڈیننس جاری کردیا گیا تو بھارت کا انکار حیران کن ہے۔

اشتراوصاف کا کہنا تھا کہ بھارت نے انکارنہیں کیا کہ کلبھوشن حاضرسروس نیول افسرنہیں، کیا بھارت صرف پروپیگنڈا کرنا جانتا ہے، بھارت اپنے ہی بوجھ تلے ڈوب رہا ہے،اسے اپنے گریبان میں جھانکنا چاہیے۔

یاد رہے پاکستان نے کلبھوشن کے معاملے پر بھارت کو دوسری قونصلر رسائی کی پیشکش کرتے ہوئے کہا تھا کہ آئی سی جےفیصلےکےتحت نیاآرڈیننس جاری کیا، آرڈیننس کے سیکشن 20 کے تحت کلبھوشن یادیو نظرثانی اپیل دائر کرسکتا ہے۔

مزید پڑھیں : پاکستان نے کلبھوشن کے معاملے پر بھارت کو دوسری قونصلر رسائی کی پیشکش کر دی

ڈی جی ساؤتھ ایشیا کا کہنا تھا کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیونے پاکستان میں دہشت گردی کا اعتراف کیا اور پاکستان نے آئی سی جے کے فیصلے کے مطابق کئی اقدامات کئے، پاکستان نے عالمی عدالت انصاف کےفیصلے کے مطابق کونسلررسائی سمیت متعدد اقدامات کئے، توقع ہے بھارت کلبھوشن کے معاملے پر سیاست کرنے کے بجائے قانونی طریقہ کارپرعمل کرے گا۔

انھوں نے کہا تھا کہ پاکستان کا قانون فیصلے ازسر نوجائزہ لینے کا حق دیتا ہے، کلبھوشن یادیو نے ازسرنو فیصلے کا جائزہ لینے کے حق کورد کردیا ہے ، تاہم پاکستان کلبھوشن کیس میں عالمی عدالت کے فیصلے پر عملدرآمد کیلئے تیار ہے۔

واضح رہے بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کو 3 مارچ 2016ء کو بلوچستان سے گرفتار کیا گیا، کلبھوشن نے دہشت گردی میں ملوث ہونے کا اعتراف کیا تھا، باضابطہ مقدمہ چلایا گیا اور 2017ء میں فوجی عدالت نے سزائے موت سنائی تھی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں