بھارتی کورٹ‌ کا فیصلہ، ملک بھر میں‌ گائے ذبح کرنے کی پابندی مسترد
The news is by your side.

Advertisement

سپریم کورٹ‌ کا فیصلہ، بھارت میں‌ گائے ذبح کرنے کی پابندی مسترد

نئی دہلی: بھارتی سپریم کورٹ نے سماجی کارکن کی جانب سے پورے ملک میں گائے ذبح کرنے کی پابندی لگانے سے متعلق دائر درخواست کو مسترد کردیا۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق بھارت کی سماجی تنظیم کے کارکن کی جانب سے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کی گئی تھی جس میں پورے ملک میں گائے ذبح کرنے پر پابندی کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

بھارتی سپریم کورٹ نے سماجی تنظیم کے کارکن کی درخواست کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ’’یہ معاملہ انتہائی حساس ہے تاہم اگر کوئی ریاست چاہیے تو وہ ازخود پابندی لگا سکتی ہے، سپریم کورٹ اس معاملے میں کبھی مداخلت نہیں کرے گی‘‘۔

پڑھیں: ’’ بھارت میں گائے کی تصویر ’واٹس ایپ‘ کرنا موت کا سبب بن گیا ‘‘

واضح رہے بھارت میں ہندو مذہب کے لوگ گائے سے عقیدت رکھتے ہیں، بے جے پی کے رہنماؤں نے انتخابی مہم کے دوران پورے بھارت میں گائے کے ذبح کرنے پر پابندی لگانے کے وعدے بھی کیے تھے۔

مزید پڑھیں: ’’ بھارت، گائے کا گوشت کھانے کا الزام، دو خواتین سے اجتماعی زیادتی

بھارت کی 29 ریاستوں میں سے صرف 8 ریاستیں ایسی ہیں جہاں گائے کے گوشت کی فروخت اور اس کے کھانے پر کوئی پابندی نہیں جبکہ دیگر ریاستوں میں طویل عرصے سے مقامی حکومتوں نے پابندی عائد کررکھی ہے۔ گائے ذبح کرنے یا گوشت کھانے کے الزام میں ہندو انتہاء پسند کئی لوگوں کو تشدد کر کے قتل بھی کرچکے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں