پراسرار بیماری میں مبتلا بھارتی بچہ اسکول جانے کا خواہش مند mysterious
The news is by your side.

Advertisement

بھارتی بچہ پراسرار بیماری میں‌ مبتلا، ہاتھ 12 انچ لمبے

آگرہ: بھارتی ریاست اترپردیش میں پُراسرار بیماری کی وجہ سے 12 سالہ لڑکے کے ہاتھ 12 انچ لمبے ہوگئے، لوگوں نے اسے شیطان قرار دے دیا اور اسے اسکول میں داخلہ بھی نہیں ملا۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی ریاست اترپردیش کے رہائشی 12 سالہ لڑکے طارق کے ہاتھ پیدائش کے وقت سے ہی بڑے ہیں تاہم عمر گزرنے کے ساتھ ساتھ اس کے ہاتھ 12 انچ تک لمبے ہوگئے۔

گاؤں کے مقامی لوگ طارق کو شیطان کہتے ہیں کیونکہ اُن کا ماننا ہے کہ اس طرح کی بیماری کسی کی بد دعا کے نتیجے میں ہی ہوتی ہے  جبکہ ڈاکٹرز کے مطابق متاثرہ بچے کی یہ کیفیت ہاتھی کی بیماری (ایلیفینٹ فوڈ) کے باعث ہے، بچے کی عمر بڑھنے کے ساتھ ساتھ اس کے ہاتھ مزید بڑے اور عجیب سے دکھائی دیں گے۔

  

طارق کے ہاتھوں کی وجہ سے مقامی اسکول نے اُسے داخلہ دینے سے منع کردیا جس کی وجہ سے وہ تعلیم حاصل نہ کرسکا اور والد کے انتقال کے بعد چائے کی دکان پر کام کرنے لگا۔

اسکول انتظامیہ کا کہنا ہے کہ انہوں نے متاثرہ بچے کو اس لیے داخلہ نہیں دیا کہ بقیہ بچے طارق کو دیکھ کر خوف کا شکار ہوجائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں: برازیلین شہری انوکھے مچھرکے کاٹنے سے ’ ہاتھی پیر‘ نامی بیماری میں مبتلا

متاثرہ بچے کا کہنا ہے کہ ’’گھر میں غربت کے باعث اب وہ ڈاکٹرز کے اخراجات برداشت نہیں کرسکتا کیونکہ والد کا انتقال ہوجانے کے بعد گھر کے اخراجات برداشت کرنے والا کوئی نہیں ہے‘‘۔

طارق نے اس عزم کا اظہار کیا کہ ایک دن گھر کے حالات اچھے ہوں گے اور وہ اس صورتحال سے باہر آجائے گا جس کے بعد عام بچوں کی طرح نظر آنے لگے گا اور اپنی تعلیم بھی حاصل کرسکے گا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں