بھارت : پانچ سو اورایک ہزارکے نوٹوں کی قانونی حیثیت ختم -
The news is by your side.

Advertisement

بھارت : پانچ سو اورایک ہزارکے نوٹوں کی قانونی حیثیت ختم

نئی دہلی : بھارت میں پانچ سو اورایک ہزار کے کرنسی نوٹوں کی قانونی حیثیت ختم کردی گئی، بڑے پیمانے پرجعلی کرنسی اورکالے دھن کو جواز بنا کر مودی سرکار نے عوام کو مشکل میں ڈال دیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت میں مودی حکومت نے کالے دھن کے مسئلے پر قابو پانے کے لیے آٹھ اور نو نومبر کی درمیانی رات سے پانچ سو اور ایک ہزار روپے کے کرنسی نوٹ ختم کرنے کا اعلان کیا ہے۔

اس اقدام کیلیے مودی سرکار نے بڑے پیمانے پرجعلی کرنسی اورکالے دھن کو جواز بنایا ہے۔ بھارتی وزیراعظم نریندرمودی کا خطاب عوام کو بھاری پڑگیا۔ بھارت میں پانچ سواُورایک ہزارکے کرنسی نوٹوں کی قانونی حیثیت ختم کر دی گئی۔

یہ غیرمعمولی اعلان وزیراعظم نریندر مودی نے پیر کی شب قوم سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اربوں روپے مالیت کے پانچ سو اُورایک ہزار کے نوٹوں کی تبدیلی کیلئےعوام کو صرف پچاس دن کا وقت دیا گیا ہے۔ آج سےبھارت میں پانچ سو اُور ایک ہزار کے کرنسی نوٹوں کی قانونی حیثیت ختم ہوگئی۔

پچاس دن بعد یہ نوٹ ردی ہوجائیں گے۔ وزیر اعظم مودی کا کہنا تھا کہ یہ رقم آپ کی ہی رہے گی۔ لیکن جن لوگوں کے پاس کالا دھن ہے، اگر وہ یہ رقم بینکوں میں جمع کراتے ہیں تو انہیں محکمہ انکم ٹیکس کو جواب دینا ہوگا کہ یہ رقم ان کے پاس کہاں سے آئی اور اس پر انہوں نے ٹیکس کیوں جمع نہیں کرایا تھا۔

بینکوں میں یہ سہولت دس نومبر سے تیس دسمبر تک دستیاب رہے گی۔ اس کے علاوہ بھارتی حکومت نے دو ہزار روپے کا نیا نوٹ بھی متعارف کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔

واضح رہے کہ انڈیا میں بدعنوانی ایک بڑا مسئلہ ہے اور بعض تخمینوں کے مطابق ملک کی متوازی معیشت کی مالیت بھی کھربووں ڈالر ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں