انڈونیشیا میں زلزلے شدید جھٹکے، 10 افراد ہلاک، 40 سے زائد زخمی indonesia-earthquake
The news is by your side.

Advertisement

انڈونیشیا میں زلزلے سے ہلاکتوں‌ کی تعداد 14 ہوگئی

جکارتہ : انڈونیشیا کے سیاحتی جزیرے پر زلزلے کے شدید جھٹکے محسوس کیے گئے ہیں، جس کے نتیجے میں ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد 14 ہوگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایشیائی ملک انڈونیشیا کے وسطی جزیرے لومبک میں اتوار کی صبح 7 بجے کے قریب خوفناک زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے ہیں، جس نتیجے میں متعدد عمارتوں کو نقصان پہنچا ہے جبکہ درجنوں افراد زخمی ہیں۔

انڈونیشیا کے حکام کا کہنا ہے کہ لومبک جزیزہ پوری دنیا سے انڈونیشیا آنے والے سیاحوں کا پسندیدہ سیاحتی مقام ہیں جہاں عموماً بے تحاشا سیاح موجود رہتے ہیں۔

قبل ازیں امریکی زلزلہ پیما کے مطابق انڈونیشیا میں آنے والے ریکٹر اسکیل پر 6.4 شدت کے زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے ہیں، جس کے باعث 10 افراد ہلاک ہوگئے، امریکا کے ماہر ارضیات کا کہنا ہے کہ انڈونیشیا میں آنے والے زلزلے کا مرکز شمالی شہر ماترام سے 50 کیلومیٹر دور شمالی لومبک تھا۔

انڈونیشیا کے ڈیزاسٹر ایجنسی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ زلزلے کے نتیجے میں درجنوں گھر زمین بوس ہوگئے ہیں اور 40 افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات بھی موصول ہوئی ہیں۔

انڈونیشین حکام کا کہنا ہے کہ خوفناک حادثے میں زخمی اور ہلاک ہونے والوں کی تعداد کا اندازہ کرلیا گیا ہے کہ البتہ تعداد میں مزید اضافے کا خدشہ ہے، تاہم ہم ابھی تک مکمل معلومات جمع نہیں سکے ہیں۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ ’امدادی خدمات انجام دینے والے رضاکاروں کی پہلی ترجیج متاثرہ افراد کو جائے حادثہ سے نکالنے اور زخمیوں کو ریسکیو کرنا ہے، حادثے میں زخمی ہونے والے چند افراد کا مقامی طبی مراکز میں علاج جاری ہے۔

واقعے کے عینی شاہد نے غیر ملکی خبر رساں ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے بتایا کہ ’زلزلے بہت طاقتور تھا، جس کے باعث میرے گھر میں سب خوفزدہ ہوگئے اور فوری طور پر گھر سے باہر انکل آئے تھے‘۔

عینی شاہد کا مزید کہنا تھا کہ زلزلے کے جھٹکے محسوس ہوتے ہی میرے تمام پڑوسی اور اہل محلہ بھی گھروں سے باہر آگئے تھے اور بجلی فوری طور بند ہوگئی تھی۔


انڈونیشیا میں زلزلے کے شدید جھٹکے ‘ 2 افراد ہلاک


خیال رہے کہ انڈونیشیا بحرالکاہل کے ایک ایسے حصے میں واقعہ ہے جہاں زلزلے آنے اور آتش فشاں پہاڑ پھٹنے کے واقعات عموماً رونما ہوتے رہتے ہیں اور دنیا بھر تقریباً آدھے آتش فشاں اسی حصّے میں پائے جاتے ہیں۔

یاد رہے 7 ماہ قبل بھی انڈونیشیا کے دارالحکومت جکارتہ سمیت گنجان آباد جزیرے جاوا میں زلرلے کے شدید جھٹکے محسوس کیے گئے تھے، جس کے نتیجے میں 2 افراد ہلاک جبکہ کئی عمارتوں کو بھی نقصان پہنچا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں