The news is by your side.

Advertisement

انڈونیشیا میں مردوں کو سنوارنے کی سالانہ تقریب

جکارتہ: انڈونیشیا کے ایک گاؤں کے باشندے اپنی عجیب و غریب سالانہ رسم کی ادائیگی کے لیے مشہور ہیں جس میں وہ مردوں کو قبروں سے نکال کر انہیں نہلا دھلا کر نئے کپڑے پہناتے ہیں۔

مقامی افراد کا ماننا ہے کہ یہ رسم ان کے دلوں اور ذہنوں میں ان کے پیاروں کی یادوں کو زندہ رکھتی ہے۔ انڈونیشن زبان میں یہ رسم ’مردوں کو صاف کرنے کی تقریب‘ کہلاتی ہے۔اس رسم میں مدفون شدہ بچوں، بزرگوں وغیرہ کی لاشوں کو بھی نکالا جاتا ہے۔

body-post-1

body-post-2

body-post-3

رسم کے دوران مردوں کو نہلا دھلا کر اور شاندار کپڑے پہنا کر مخصوص راستوں پر گھمایا جاتا ہے۔ اس موقع پر ان کے ٹوٹے ہوئے تابوتوں کی بھی مرمت کی جاتی ہے۔

body-post-4

body-post-5

body-post-6

اس گاؤں تورا جان کے افراد کے لیے موت کوئی دکھ اور الم کی بات نہیں۔ یہ اپنے پیاروں کو مرنے کے بعد بھی ہفتوں، مہینوں اور بعض دفعہ سالوں اپنے گھروں میں ہی رکھتے ہیں اور طویل عرصہ بعد ان کی تدفین کرتے ہیں۔ ان کا ماننا ہے کہ مرنے کے بعد بھی ان کے پیارے ان کے خاندان کا حصہ رہتے ہیں۔

body-post-7

body-post-8

body-post-9

تورا جان کے مقامی افراد اپنے مردوں کی تجہیز و تکفین بھی بہت شان و شوکت سے کرتے ہیں اور ان کی آخری رسوم کی تقریبات کئی دن تک ادا کی جاتی ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں