site
stats
عالمی خبریں

انڈونیشیا میں مبینہ خودکش خاتون حملہ آور کو ساڑھے7سال قید کی سزا

جکارتا: انڈونیشیا میں مبینہ خودکش خاتون حملہ آور کو ساڑھے7سال قید کی سزا سنا دی گئی۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق جکارتہ کی عدالت نے ایک خاتون خودکش حملہ آور کو ساڑھے سات سال قید کی سزا سنا دی، پراسیکیوٹر اور وکیل کا کہنا ہے کہ پہلی مرتبہ انڈونیشیا میں اس طرح کے حملے کی منصوبہ بندی کے لئے ایک خاتون کو سزا دی گئی ہے۔

پروسیکیوٹر نے ملزمہ کو 10 سال قید کی سزا دینے کی استدعا کی تھی۔

جکارتہ کی عدالت کے جج سفیرالدین انیور رفیق کا کہنا تھا کہ خاتون کا منصوبہ تھا کہ وہ صدارتی گارڈ کے قریب جا کر خود کو دھماکا سے اڑالے، انسداد دہشت گردی قانون کی خلاف ورزی کرنے خاتون مجرم ثابت ہوئی ہیں۔

وکیل کا کہنا تھا کہ ان کی موکلا نے سزا کے خلاف اپیل کا فیصلہ نہیں کیا کیونکہ نووی حاملہ ہے اور ستمبر کے پہلے ہفتے میں ڈلیوری کے مرحلے سے گزرنے والی ہیں۔

یاد رہے کہ گذشتہ سال جکارتہ میں صدارتی محل میں گارڈز کی تبدیلی کی تقریب کے دوران بم دھماکے کی کوشش ناکام بنادی گئی تھی اور اس دوران خاتون کو 3کلو وزنی بم کے ساتھ گرفتار کیا گیا تھا۔

خاتون داعش سے متاثر اور صدارتی محل کو نشانہ بناناچاہتی تھی۔

خیال رہے کہ بم دھماکے کا منصوبہ بنانے کے الزام میں خاتون کے شوہر سمیت 4 افراد بھی شامل ہے۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس  وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top