The news is by your side.

Advertisement

زخمی فلسطینی نوجوان اسرائیلی جیل میں تشدد کے باعث دم توڑ گیا

غزہ: اسرائیل نے نہتے فلسطینیوں پر بربریت کی انتہا کردی، زخمی فلسطینی نوجوان اسرائیلی جیل میں تشدد کے باعث دم توڑ گیا۔

تفصیلات کے مطابق اسرائیلی فوج کی جانب سے ایک ہفتہ قبل گولیاں مار کر زخمی حالت میں گرفتار فلسطینی نوجوان دوران حراست مزید تشدد کے نتیجے میں زندگی کی بازی ہار گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق عمر عونی عبدالکریم یونس کو اسرائیلی فوج نے ایک ہفتہ قبل غرب اردن کے جنوبی شہر نابلس میں زعترہ چیک پوسٹ پرگولیاں مار کر شدید زخمی کر دیا تھا۔

بعد ازاں اسے زخمی حالت میں گرفتار کرکے عقوبت خانے میں ڈال دیا گیا، جہاں اس تشدد سے اس کی حالت مزید بگڑ گئی، اسے اسرائیل کے بیلنسن اسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ گذشتہ شام زخموں کی تاب نہ لاکر شہید ہوگیا۔

فلسطینی وزارت صحت نے اسیر عمر یونس کی شہادت کی تصدیق کی اور کہا کہ شہید کا جسد خاکی اس کے ورثا کے حوالے کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

ادھر کلب برائے اسیران نے فلسطینی شہری کی اسرائیلی عقوبت خانے میں شہادت پر افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ اسیر 20 سالہ عمر عونی کو دانستہ طور پر گولیاں مار کر شدید زخمی کیا گیا۔

فلسطینی قوم کو کئی چیلنجز اور مشکلات کا سامنا ہے: اقوام متحدہ

اس کا تعلق غرب اردن کے نواحی علاقے قلقیلیہ سے تھا۔ اسرائیلی زندانوں میں تحریک اسیران کے دوران اب تک 219 فلسطینی شہید کیے جا چکے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں