The news is by your side.

عمران خان سے وزیر اعلیٰ پنجاب اور پی ٹی آئی رہنماؤں کی ملاقات کی اندرونی کہانی

پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان سے گزشتہ روز وزیر اعلیٰ پنجاب اور پارٹی رہنماؤں کی ملاقات کی اندرونی کہانی اے آر وائی نیوز نے پتہ لگا لی۔

گزشتہ روز لاہور میں پی ٹی آئی چیئرمین کی رہائشگاہ پر ہونے والی اس اہم ملاقات کے حوالے سے ذرائع نے اے آر وائی نیوز کو بتایا کہ وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الہٰی نے عمران خان کو آگاہ کیا کہ پولیس افسران درخواست کے مطابق پرچہ درج نہیں کر رہے ہیں۔

عمران خان نے اس موقع پر کہا کہ میں وزیر آباد قاتلانہ حملے کی درخواست سے پیچھے نہیں ہٹوں گا۔

ذرائع نے بتایا کہ پرویز الہٰی نے عمران خان کو پیشکش کی کہ اس کا حل یہ ہے کہ آپ اپنی مرضی کے کسی بھی ایس ایچ کا نام دے دیں، اس موقع پر وزیراعلیٰ پنجاب نے میٹنگ میں موجود پی ٹی آئی کے تین اہم رہنماؤں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ آپ جس ایس ایچ او کا نام دیں گے ہم اس کی تعیناتی متعلقہ تھانے میں کردیں گے، اس طرح وہ ایس ایچ او آپ کی درخواست کے مطابق ایف آئی آر درج کرلے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اس پیشکش پر میٹنگ میں موجود تحریک انصاف کے تینوں اہم رہنما شاہ محمود قریشی، اسد عمر اور حماد اظہر خاموش رہے اور کسی نے نام نہ دیا۔

ذرائع کے مطابق پی ٹی آئی رہنماؤں کے اس طرح خاموش رہنے اور وزیراعلیٰ پنجاب کی پیشکش پر کسی شخص کا بطور ایس ایچ او نام نہ دینے پر چیئرمین عمران خان بھی حیران رہ گئے اور اس موقع پر کئی منٹ تک خاموشی چھائی رہی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب کی اس پیشکش پر پی ٹی آئی رہنماؤں کی جانب سے کوئی نام نہ دیے جانے پر فیصلہ ہوا کہ حملے کی ایف آئی آر کا معاملہ پولیس پر ہی چھوڑ دیا جائے اور تحریک انصاف اس معاملے پر اپنے موقف پر قائم رہے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں