The news is by your side.

Advertisement

آصف زرداری نے ایم کیو ایم وفد کو کیا یقین دہانی کرائی؟

کراچی: آصف علی زرداری سے ایم کیو ایم کے وفد کی ملاقات کی اندرونی کہانی سامنے آ گئی۔

ذرائع کے مطابق ایم کیو ایم رہنماؤں نے آصف زرداری سے ملاقات میں ان کو تحریری معاہدے سے متعلق یاد دہانی کرائی، جس پر پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین نے انھیں یقین دہانی کرائی کہ ایم کیو ایم کے ساتھ جو تحریری معاہدہ کیا گیا تھا اس پر مکمل عمل درآمد کیا جائے گا۔

ملاقات میں ایم کیو ایم نے شہری سندھ میں بلدیاتی افسران اور ایڈمنسٹریٹر کراچی کا عہدہ دینے پر بات کی، ذرائع کا کہنا ہے کہ ایم کیو ایم نے سندھ کابینہ میں شمولیت سے متعلق وزارتوں کا معاملہ حل کرنے پر زور دیا۔

پی پی اور ایم کیوایم نیا بلدیاتی نظام لانے پر متفق

ذرائع کا کہنا ہے کہ اس اہم ملاقات میں پاکستان پیپلز پارٹی کی جانب سے ایم کیو ایم کو کراچی اور حیدر آباد کے لیے نئے بجٹ میں خصوصی فنڈز رکھنے پر بھی یقین دہانی کرائی گئی، ایم کیو ایم کے وفد نے آصف علی زرداری سے سندھ حکومت میں شمولیت اور گورنر سندھ کی تقرری پر بھی مشاورت کی۔

خیال رہے کہ گورنر سندھ کے معاملے پر صدر مملکت عارف علوی کی جانب سے آئینی کردار ادا نہیں کیا جا رہا، ایم کیو ایم کے وفد میں شامل ارکان نے عارف علوی کے طرز عمل پر تنقید کی، ایم کیو ایم رہنماؤں نے کہا کہ وزیر اعظم نے نسرین جلیل کو گورنر بنانے کی سمری ارسال کر رکھی ہے، لیکن صدر تاخیری حربے استعمال کر رہے ہیں۔

ذرائع کے مطابق ایم کیو ایم نے بلدیاتی قوانین میں ترمیم سمیت میئر کو اختیار دینے سے متعلق مسودے پر بھی مشاورت کی، آصف علی زرداری کا اس موقع پر کہنا تھا کہ ایم کیوایم کی سندھ حکومت میں شمولیت سے صوبے میں ترقی کا عمل تیز ہوگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں