ماہ رخ کے والد نے امریکا سے فون کر کے دھمکایا، قتل کے کئی شواہد مٹا دیے گئے:انتظار کے والد کا انکشاف -
The news is by your side.

Advertisement

ماہ رخ کے والد نے امریکا سے فون کر کے دھمکایا، قتل کے کئی شواہد مٹا دیے گئے:انتظار کے والد کا انکشاف

کراچی: ڈیفنس میں پولیس اہلکاروں کے ہاتھوں قتل ہونے والے انتظار کے والد نے کہا ہے کہ ماہ رخ میرے بیٹے کی دوست تھی، لڑکی کے والد نے امریکا سے فون کر کے مجھے دھمکیاں دی تھیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ مقتول انتظار کے والد اشتیاق احمد کا کہنا تھا کہ ماہ رخ میرے بیٹے کے ساتھ اسکول میں پڑھا کرتی تھی اور وہ میرے بیٹے کو پسند کرتی تھی۔

انتظار قتل کیس: واقعے کی سی سی ٹی وی فوٹیج سامنے آگئی

انہوں نے کہا کہ ماہ رخ کے والد اپریل 2016 سے امریکا میں مقیم ہیں، لڑکی کے والد نےمجھے  دھمکی دی تھی کہ میرا بھائی کراچی میں بڑی پوسٹ پر تعینات ہے، ماہ رخ سابق ایس ایس پی اے سی ایل سی مقدس حیدر کی بھتیجی ہے۔

انتظار قتل کیس: والد تفتیش سے دلبرداشتہ، چیف جسٹس کو خط لکھ دیا

والد انتظار کا کہنا تھا کہ میں نے اپنے بیٹے کو اسی خوف سے ملائیشیا بھیج دیا تھا، بیٹے کے قتل کے کئی شواہد مٹا دیے گئے ہیں، میں چیف جسٹس اور آرمی چیف سے انصاف کی اپیل کرتا ہوں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ انصاف نہ ملا تو خاندان سمیت پریس کلب پر بھوک ہرتال کروں گا۔

یاد رہے کہ چند ہفتوں قبل کراچی کےعلاقے ڈیفنس میں ایک انتہائی افسوسناک واقعہ اُس وقت پیش آیا تھا کہ جب اینٹی کار لفٹنگ فورس (اے سی ایل سی) کے چار اہلکاروں نے نامعلوم کار پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں ملائشیا سے آنے والا انتظار نامی نوجوان جاں بحق ہو گیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں