The news is by your side.

ایرانی حکومت نے گشتِ ارشاد فورس ختم کرنے کا اعلان کر دیا

تہران: ایران میں مظاہرین کا احتجاج رنگ لانے لگا، ایرانی حکومت نے گشتِ ارشاد فورس ختم کرنے کا اعلان کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق کُرد خاتون مہسا امینی کی پولیس کی حراست میں ہلاکت کے واقعے کے بعد سے شروع ہونے والے مظاہروں کا نتیجہ ایران کی اخلاقی پولیس کے محکمے کے خاتمے پر نکل آیا۔

اٹارنی جنرل محمد جعفر منتظری نے سرکاری نیوز ایجنسی کو بتایا کہ گشتِ ارشاد فورس کا عدالتی نظام سے کوئی تعلق نہیں ہے اور اسے ختم کر دیا گیا ہے۔

ستمبر میں حجاب نہ لینے پر گشتِ ارشاد فورس نے مہسا امینی کو حراست میں لیا تھا، جو دوران حراست تشدد سے چل بسی تھی۔

ایران حجاب کے قانون کا ازسرنو جائزہ لینے پر آمادہ ہو گیا

واقعے کے بعد سے ایران بھر میں مظاہرے جاری ہیں، ان مظاہروں میں اب تک ساڑھے تین سو افراد مارے جا چکے ہیں، اٹارنی جنرل کے مطابق ایرانی پارلیمنٹ نے بھی حجاب سے متعلق قانون کا جائزہ لینا شروع کر دیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں