The news is by your side.

Advertisement

آبنائےہرمزمیں ایرانی جہازورں نےامریکی جہازکو راستہ بدلنےپرمجبورکردیا

واشنگٹن : امریکی حکام کاکہناہےکہ ایرانی بحری جہاز آبنائے ہرمز میں امریکہ کےمیزائل تجربات کی نگرانی رکھنے والے جہاز کے قریب آئےاور ان کےجہازکو راستہ بدلنےپرمجبورکردیا۔

تفصیلات کےمطابق امریکی حکام کا کہناہےکہ گزشتہ روز ایرانی پاسدران انقلاب کے بحری جہازامریکی جہاز کے 600کلومیٹر قریب پہنچ گئے اوراس طرح کا واقعہ غیرمحفوظ ہے۔

امریکی حکام کے مطابق ایرانی بحری جہازوں نے امریکی اور دوسری بحری جہازوں کے درمیان آنے کی کوشش کی۔تاہم وراننگ کے لیے فائرنگ یا روشنی کےگولے نہیں پھینکےگئے۔

1

مزید پڑھیں:ایران دہشت گردی کی معاونت کرنے والاسب سےبڑاملک قرار‘جیمز میٹس

آبنائے ہرمز میں تین روز قبل بھی ایرانی بحری جہاز امریکی جہاز کےقریب آگیاتھا اورگزشتہ ایک ہفتے کے دوران پیش آنے والا یہ دوسرا واقعہ ہے۔

خیال رہےکہ آبنائے ہرمز ایران اور اومان کے درمیان ایک تنگ بحری راستہ ہےجو سمندر کے راستے خام تیل کی تجارت کرنے والے تقریباً ایک تہائی ممالک کو ایک راستہ فراہم کرتا ہے۔

2

مزید پڑھیں: امریکہ کی خلیج فارس میں ایرانی جہاز پرفائرنگ

یاد رہےکہ گذشتہ سال اگست میں بھی امریکی محکمہ دفاع کا کہنا تھا کہ خلیج فارس میں اس کے جنگی بحری جہاز کو اس وقت ایرانی بحری جہاز کوخبردار کرنے کے لیے فائرنگ کی گئی جب وہ اس کے دو بحری جہازوں کے قریب پہنچ گیاتھا۔

واضح رہےکہ آبنائے ہرمز میں یہ واقعات ایک ایسے وقت پیش آئے ہیں جب گذشتہ ماہ امریکہ نے ایران پر میزائل تجربات کرنے کی وجہ سے پابندیاں عائد کر دی تھیں۔

3

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں