The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس: چین نے خشک خوبانی اور کشمش استعمال کر کے وائرس کو شکست دی؟

استنبول / بیجنگ: چین نے کرونا وائرس کو تقریباً نجات دے دی اور اب وہاں سب سے زیادہ متاثر ہونے والے شہر ووہان کو بھی 76 روز بعد دوبارہ کھول دیا گیا جہاں معمولاتِ زندگی بحال ہوگئے۔

چین نے کرونا وائرس کو کس طرح شکست دی اس حوالے سے مختلف باتیں سامنے آرہی ہیں جبکہ چینی وزارتِ صحت کے ترجمان واضح کرچکے ہیں کہ انہوں نے سخت لاک ڈاؤن کے بعد ہی وبا پر قابو پایا۔

اب ایک اور خبر سامنے آئی ہے کہ چین نے کرونا وبا پھیلنے کے بعد ترکی سے خشک خوبانی درآمد کرنا شروع کی جس کی وجہ سے ترکی کی برآمدات 125 فیصد اضافے کے بعد 2 ملین ڈالر سے بڑھ کر 45 ملین ڈالر تک پہنچ گئی ہے۔

مزید پڑھیں: کرونا وائرس: قبل ازوقت ظاہر ہونے والی 8 بڑی علامات

اہم بات یہ ہے کہ اگست، ستمبر، اکتوبر اور نومبر میں خشک خوبانی کی ایکسپورٹ جاری تھی البتہ دسمبر میں جب کرونا کے کیسز سامنے آنا شروع ہوئے تو برآمد میں 125 فیصد تک اضافہ ہوگیا۔

خشک خوبانی سمیت دیگر میوہ جات کی برآمدات کرنے والی یونین کے سربراہ برول جیلیپ نے ترک میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ’اگست 2019 سے 30 مارچ 2020 تک 76 ہزار ٹن خوبانی برآمد کر کے 197 ملین ڈالر کا زرمبادلہ حاصل کیا‘۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’خشک میوہ جات جیسے کشمش، خشک خوبانی اور انجیر کے استعمال سے قوتِ مدافعت میں اضافہ ہوتا ہے اسی باعث چین سے  بڑے پیمانے پر آرڈر ملے اور ہم نے مال بھیجا‘۔

مزید پڑھیں: ووہان سے 76 روز بعد کرونا وائرس لاک ڈاؤن ختم، امریکی میڈیا

برول جیلیپ کا کہنا تھا کہ ’چین کے بعد دنیا کے 105 ممالک نے خوبانی کی برآمد کے آرڈر دینا شروع کردیے ہیں، امریکا کو 26 ملین ڈالر، جرمنی کو 18 اور فرانس کو 17 ملین ڈالر کی خوبانی ایکسپورٹ کی گئی‘۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں