The news is by your side.

Advertisement

زیرحراست فلسطینیوں پر تشدد، 3 اسرائیلی فوجیوں کو صرف چھ ماہ قید کی سزا

غزہ: فلسطین میں زیرحراست معصول قیدیوں پر تشدد کے جرم میں 3 اسرائیلی فوجیوں کو صرف چھ ماہ قید کی سزا سنائی گئی۔

تفصیلات کے مطابق فلسطین میں بربرت اور جارحیت کی انتہا کرنے والی اسرائیلی فوج کے خلاف عدالتی فیصلے میں بھی تعصب اور فلسطینیوں کے خلاف بغض کھل کر سامنے آگیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ اسرائیلی تحویل میں دو فلسطینیوں کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا گیا تھا جس کے جرم میں عدالت نے 6 ماہ قید کا فیصلہ سنایا۔

تینوں فوجیوں کو پلی بارگین کے تحت سزا سنائی گئی۔ خیال رہے کہ زیرحراست فلسطینیوں پر الزام عائد کیا گیا ہے کہ انہوں نے غزہ میں اسرائیلی فوج پر فائرنگ کی تھی۔

اسرائیلی فوج نے ڈھٹائی کا مظاہرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ زیرحراست فلسطینی قاتل ہیں، انہوں نے تین فوجیوں کو غزہ میں ہلاک کیا۔ جبکہ اس حوالے سے کوئی ثبوت سامنے نہیں آئی۔

اسرائیل میں انتخابات قریب، نیتن یاہو کا فوجی جارحیت جاری رکھنے کا عزم

خیال رہے کہ غزہ میں قابض اسرائیلی فوجیوں نے اپنی جارحیت جاری رکھی ہوئی ہے، ہفتہ وار مظاہرے کے دوران ہمیشہ کسی نہ کسی نہتے شہری کو شہید کردیتے ہیں۔

دو روز قبل ہی غزہ میں ہفتہ وار احتجاجی مظاہرے کے دوران قابض اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے ایک فلسطینی شہید جبکہ درجنوں زخمی ہوگئے تھے۔

واضح رہے کہ اسرائیل میں الیکشن 9 اپریل کو ہونے جارہے ہیں، بین الاقوامی تعلقات عامہ کے ماہرین نے خیال ظاہر کیا ہے کہ اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو شدید تناؤ کا شکار ہیں، انتخابات ہار بھی سکتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں