The news is by your side.

Advertisement

اسرائیلی دہشت گردی، غزہ میں 34 اور غرب اردن میں 2 فلسطینی شہید

غزہ میں اسرائیلی فوج کی مسلط کی گئی جنگ کی وجہ سے فلسطینیوں کی شہادتوں میں اضافہ ہوا،القدس اسٹڈی سینٹر

مقبوضہ غزہ : القدس اسٹڈی سینٹر کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ مئی2019ءکو فلسطین میں اسرائیلی فوج کی ریاستی دہشت گردی کے نتیجے میں 36 فلسطینی شہید ہوئے, شہداءمیں 34 غزہ کی پٹی اور 2 غرب اردن سے تعلق رکھتے ہیں۔

شہداءمیں 28 فلسطینی غزہ پر اسرائیلی جارحیت میں شہید ہوئے جب کہ 3 فلسطینی غزہ میں احتجاجی مظاہروں میں شہید ہوئے۔

میڈیارپورٹس کے مطابق مئی کے دوران قابض اسرائیلی فوج کی کارروائی میں غرب اردن میں دو فلسطینی شہید ہوئے۔ ان میں ایک فلسطینی شہری القدس میں نماز جمعہ کی ادائیگی کے دوران اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے شہید ہوا۔

القدس اسٹڈی سینٹر کے ڈائریکٹر عماد ابوعواد نے ایک بیان میںکہا کہ غزہ میں اسرائیلی فوج کی مسلط کی گئی جنگ کی وجہ سے فلسطینیوں کی شہادتوں میں اضافہ ہوا۔

ان کا کہنا تھا کہ غزہ میں اسرائیلی فوج کی دہشت گردی میں شہید ہونے والے بیشتر فلسطینی عام شہری ہیں جن کا کسی عسکری گروپ کے ساتھ کوئی تعلق نہیں۔

رپورٹ کے مطابق دسمبر 2017ءکو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے القدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دینے جانے کے اعلان کے بعد پورے فلسطینی میں 448 فلسطینی شہید ہوچکے ہیں۔

ان میں 98 بچے، 18 خواتین، چھ معذور،21 مزاحمت کار شامل ہیں۔ 73 فلسطینی اسرائیلی ریاست کے جنگی طیاروں کی بمباری میں شہید ہوئے جب کہ اس دوران 8 فلسطینی اسرائیلی زندانوں میں وحشیانہ تشدد کے نتیجے میں جام شہادت نوش کرگئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں