ہفتہ, مئی 25, 2024
اشتہار

سپریم کورٹ نے جڑانوالہ واقعے سے متعلق پنجاب حکومت کی رپورٹ مسترد کردی

اشتہار

حیرت انگیز

اسلام آباد : سپریم کورٹ نے جڑانوالہ واقعے سے متعلق پنجاب حکومت کی رپورٹ مسترد کردی، چیف جسٹس نے کہا رپورٹ دیکھنے کے بعد مجھے شرمندگی ہورہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے جڑانوالہ واقعے سےمتعلق پنجاب حکومت کی رپورٹ مسترد کردی، چیف جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے ریمارکس دیئے پنجاب حکومت کی رپورٹ ردی کی ٹوکری میں پھینکنے کے قابل ہے، جڑانوالہ واقعے سے متعلق یہ رپورٹ دیکھنے کے مجھے شرمندگی ہو رہی ہے۔

چیف جسٹس نے استفسار کیا جڑانوالہ واقعے میں کتنے لوگ پکڑے گئے؟ دوران سماعت پنجاب حکومت نے جڑانوالہ واقعے سے متعلق پیشرفت رپورٹ جمع کرادی۔

- Advertisement -

ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب نے بتایا کہ22 مقدمات درج، 304 افراد گرفتار ہوئے جبکہ 22 میں سے 18 ایف آئی آرز کے چالان جمع ہوئے، جس پر چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ ماشاءاللہ سے چھ ماہ میں صرف یہ 18 چالان ہوئے؟ دوسری جگہوں پر جا کر اسلاموفوبیا پر ڈھنڈورا پیٹتے ہیں اور خود کیا کر رہے ہیں؟

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے ریمارکس دیئے غیر مسلموں کے ساتھ جو سلوک بھارت میں ہو رہا ہے وہ کاپی کرنا چاہتے ہیں؟ کتنے بجے پہلا چرچ جلا تھا اور اگست میں فجر کب ہوتی ہے؟

ایس پی انویسٹی گیشنز فیصل آباد نے بتایا کہ توہین مذہب کاواقعہ صبح 5:15 بجے ہوا،مسلمان کمیونٹی نے اجلاس کر کے فیصلہ کیا کہ توہین مذہب پر کارروائی کریں، جس پر جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کا کہنا تھا کہ پولیس نے اپنی آنکھوں کے سامنے سب جلتادیکھا؟جڑانوالہ میں بہادر پولیس کھڑی تماشہ دیکھتی رہی۔

چیف جسٹس نے سوالات اٹھاتے ہوئے کہا کہ کیا پاکستان میں پولیس صرف مسلمانوں کےتحفظ کیلئے ہے؟ کیا ایسا ہو سکتا ہے کوئی قرآنی اوراق کی بےحرمتی کرےاوراپنا شناختی کارڈ رکھ دے؟ کیا آپ کو سمجھ نہیں آئی تھی کہ یہ سازش ہورہی ہے؟ کیا مسیحی برادری آپ کوعقل سےمحروم لگتی ہے جوثبوت بھی چھوڑے گی؟

چیف جسٹس پاکستان نے سوال کیا کہ کتنے پولیس والوں کو فارغ کیا گیا؟ ایس ایس پی انویسٹی گیشن نے بتایا کہ پولیس اہلکاروں کےخلاف انکوائری ہو رہی ہے، جڑانوالہ واقعے پر جے آئی ٹی بنائی گئی تھی۔

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے ریمارکس دیئے کہ یہ جے آئی ٹی کیابلا ہوتی ہے؟ جس کام کو پورا نہ کرنا ہو اس پر جے آئی ٹی بنا دی جاتی ہے، پولیس کابنیادی فرض عوام کا تحفظ کرنا ہے۔

Comments

اہم ترین

راجہ محسن اعجاز
راجہ محسن اعجاز
راجہ محسن اعجاز اسلام آباد سے خارجہ اور سفارتی امور کی کوریج کرنے والے اے آر وائی نیوز کے خصوصی نمائندے ہیں

مزید خبریں