The news is by your side.

Advertisement

لاس اینجلس : اُڑتا ہوا شخص اچانک جہاز کے پاس آگیا، پھر کیا ہوا ؟

لاس اینجلس : طیاروں کے پائلٹوں کو دوران پرواز پرندوں اور ڈرونز کو دیکھنے کا اکثر تجربہ رہتا ہے لیکن گزشتہ روز اپنے سامنے ایک شخص کو جیٹ پیک پر اڑتے ہوئے دیکھ کر پائلٹ نے فوراً کنٹرول ٹاور کو اطلاع دی۔

لاس اینجلس کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے قریب ایک شخص کو تین ہزار فٹ کی بلندی پر پرواز کرتے ہوئے دیکھ کر پائلٹ بھی گھبرا گیا کیونکہ یہ شخص طیارے سے صرف300گز کے فاصلے پرتھا جو کسی بھی حادثے کا سبب بن سکتا تھا۔

فلاڈیلفیا سے امریکی ائیرلائن کی پرواز1997 کے پائلٹ نے ہوائی ٹریفک کنٹرول کو بتایا کہ ایک شخص جیٹ پیک پر اڑ رہا ہے۔
جس پر کنٹرول ٹاور نے دریافت کیا کہ وہ شخص آپ کے بائیں طرف ہے یا دائیں طرف؟

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق  پائلٹ نے بتایا کہ وہ شخص جہاز کے بائیں طرف 300 گز کے فاصلہ پر موجود ہے، کنٹرول ٹاور کو ایک اور پائلٹ نے بتایا کہ اس نے اس شخص کو وہاں سے گزرتے ہوئے بھی دیکھا ہے۔

اس حوالے سے فیڈرل ایوی ایشن ایڈمنسٹریشن نے بتایا ہے کہ واقعے کی تحقیقات لاس اینجلس پولیس ڈیپارٹمنٹ کو سونپ دی گئی ہیں جس کے بعد اس معاملے پر مزید کارروائی کی جائے گی۔

علاوہ ازیں امریکی ایئر لائنز نے پائلٹ کی شناخت کرنے سے انکار کردیا ہے، واقعے کی تحقیقات کا حوالہ دیتے ہوئے حکام کا کہنا ہے کہ ایف جیٹ بلو کے اہلکار اس پر کوئی تبصرہ نہیں کریں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں