The news is by your side.

Advertisement

بھارت میں درندگی کی انتہا، بیٹے نے ماں کو قتل کر کے لاش پر کھانا پکایا، افسوسناک واقعہ

نئی دہلی: بھارتی ریاست جھار کھنڈ کے ضلع سنگھاب ہم میں نشے میں دھت شخص نے سوال کرنے پر  سفاکیت کی انتہا کرتے ہوئے ماں کو قتل کیا اور پھر لاش کو جلا کر کھانا بنایا۔

انڈیا ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق بھارتی ریاست جھار کھنڈ کے مغربی ضلع سنگھاب ہم میں 35 سالہ شخص نے اپنی 60 سالہ ماں کو صرف اس بات پر قتل کیا کہ اُس نے نشے جیسی بری لت چھوڑنے کے لیے بیٹے سے ڈانٹ ڈپٹ کی تھی۔

رپورٹ کے مطابق پردھان سوئی نامی شخص اپنی 60 سالہ ماں سومی اور بہن کے ساتھ رہائش پذیر تھا، وہ جمعے کی رات نشے کی حالت میں گھر آیا اور ماں سے فورا کھانا مانگا۔

ماں اپنے جگر گوشے کو اس حالت میں دیکھ کر گھبرا گئی اور اُس نے سوالات کے ساتھ اُس سے ناراضی کا اظہار کرتے ہوئے تھوڑا سا ڈانٹا۔

مزید پڑھیں: نشے کے عادی شخص کا بیوی پر قاتلانہ حملہ

یہ بھی پڑھیں: نشے میں‌ دھت شخص‌ نے سفاکیت کی انتہا کردی، افسوسناک واقعہ

پردھان نے اسی دوران ماں سے کھانا مانگا اور تھوڑی دیر ہوئی تو اُس نے لاٹھی اٹھا کر ماں کو بہیمانا تشدد کا نشانہ اُس وقت جب تک وہ ہلاک نہیں‌ ہوگئی۔

سفاک شخص نے ماں کی لاش کو لکڑیوں والے چولہے پر جلایا اور اُس سے مرغی کا بروسٹ (گوشت ) پکا کر کھایا۔

پردھان کی بہن نےجب یہ منظر دیکھا تو اُس نے پڑوسی کو واقعے سے متعلق آگاہ کیا جس کے بعد پڑوسی نے پولیس کو اطلاع دی اور پھر نفری مذکورہ گھر پہنچی، جہاں انہوں نے پردھان کو حراست میں لے کر لاش برآمد کی۔

پولیس افسر کے مطابق پردھان نے نصف فیصد لاش کو جلا دیا تھا۔ ملزم نے پولیس کو بتایا کہ اُس نے اپنی ماں کو نشے سے روکنے کی بات کرنے اور کھانا دیر سے دینے پر قتل کیا اور  پھر اُس کی لاش کو جلا کر اُسی پر کھانا بھی بنایا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں