The news is by your side.

Advertisement

جسٹس قیصر رشید قائمقام چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ تعینات

پشاور: جسٹس قیصر رشید کو قائم مقام چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ تعینات کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق صدر مملکت عارف علوی نے معزز جج کی تقرری کا نوٹیفکیشن جاری کیا، جسٹس قیصر رشید پشاور ہائیکورٹ کے سب سےسینئر جج ہیں۔

گذشتہ روز پشاور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس جسٹس وقار سیٹھ کرونا کے باعث اسلام آباد میں انتقال کرگئے تھے، جسٹس وقار کی وفات کے باعث چیف جسٹس پشاورہائیکورٹ کا عہدہ خالی ہو گیا تھا۔

دوسری جانب چیف جسٹس وقار احمدسیٹھ کی تدفین کوہاٹی گیٹ قبرستان میں کردی گئی ہے، مرحو م کو والدہ کی قبر کے پہلو میں سپردخاک کیا گیا۔واضح رہے کہ گذشتہ روز چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ جسٹس وقار احمد سیٹھ علالت کے باعث انتقال کرگئے تھے، ترجمان پشاور ہائیکورٹ نےجسٹس وقار احمد سیٹھ کے انتقال کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ چیف جسٹس کورونا کے مرض میں مبتلا تھے، چیف جسٹس پشاورہائیکورٹ کی طبیعت کچھ دنوں سےخراب تھی اور وہ کلثوم انٹرنیشنل اسپتال اسلام آباد میں زیرعلاج تھے۔

چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ وقار احمد سیٹھ کا شمار خیبرپختونخوا کے ان ججوں میں ہوتا تھا جنہوں نے انتہائی اہم معاملات میں فیصلے دیے اور وکلا ان فیصلوں کو ‘بولڈ’ سمجھتے تھے۔

چیف جسٹس وقار احمد سیٹھ خیبر پختونخوا کے ضلع ڈیرہ اسماعیل خان کے ایک متوسط کاروباری خاندان سے تعلق رکھتے تھے۔ انہوں نے اپنی تعلیم پشاور کے تعلیمی اداروں سے حاصل کی ہے۔ اسلامیہ کالج سے گریجویشن کی اور لا کالج پشاور یونیورسٹی سے پہلے قانون کی ڈگری حاصل کی اور پھر پولیٹیکل سائنس میں ماسٹرز کیا۔ تعلیم سے فارغ ہونے کے بعد انھوں نے 1985 میں عملی وکالت کا آغاز کیا۔

یہ بھی پڑھیں:  چیف جسٹس پشاورہائیکورٹ جسٹس وقار احمد سیٹھ انتقال کرگئے

جسٹس وقار احمد سیٹھ 1990 میں ہائی کورٹ اور پھر 2008 میں سپریم کورٹ کے وکیل بنے۔ انھیں 2011 میں ایڈیشنل سیشن جج تعینات کیا گیا اور اس کے بعد وہ بینکنگ کورٹس سمیت مختلف عدالتوں میں تعینات رہے۔وقار احمد سیٹھ نے 2018 میں چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ کے عہدے کا حلف لیا۔

آئین شکنی کیس میں انہوں نے سابق صدر پرویزمشرف کو سزائے موت سنائی تھی جب کہ انہوں نے ریٹائرمنٹ کی عمر 63سال کرنے کے فیصلے کو کالعدم قرار دے دیا، کے پی حکومت نے سرکاری ملازمین کی ریٹائرمنٹ کی عمر60 سے بڑھا کر63سال کی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں