کے الیکٹرک کی فروخت حکومتی منظوری کے بغیر نہیں ہوگی،حکومت -
The news is by your side.

Advertisement

کے الیکٹرک کی فروخت حکومتی منظوری کے بغیر نہیں ہوگی،حکومت

کراچی : ابراج گروپ نے کے الیکٹرک کو فروخت کرنے کی تیاری کرلی ہے، حکومت نے صاف بتا دیا کہ حکومتی منظوری کے بغیر کوئی ڈیل نہیں ہو گی، کے الیکٹرک کی نجکاری کا تجربہ پہلے ہی بہت اچھا ثابت نہیں ہوا۔

تفصیلات کے مطابق کے الیکٹرک کی جانب سے پاکستان اسٹاک ایکس چینج کو جاری کردہ نوٹس میں کہا گیا ہے کہ ’’کے الیکٹرک‘‘ میں اکثریتی حصص رکھنے والا ’’ابراج گروپ‘‘ اپنے حصص کی فروخت کے امکانات کا جائزہ لے رہا ہے۔

انڈسٹری ذرائع کے مطابق ممکنہ خریداروں میں سب سے اہم چینی کمپنی شنگھائی الیکٹرک ہے، کے الیکٹرک کے چھیاسٹھ فیصد حصص دبئی کی کمپنی ابراج گروپ کے پاس ہیں جبکہ بقیہ چوبیس فیصد حصص حکومت پاکستان کے پاس ہیں۔

وزارت پانی وبجلی کا کہنا ہے کہ حکومتی منظوری کے بنا کوئی ڈیل نہیں ہوسکتی، ابراج گروپ کے الیکٹرک نہیں فروخت کرسکتا۔

سیکریٹر ی پانی و بجلی یونس ڈھاگہ کا کہنا ہے کہ کے الیکٹرک کا فروخت پہلے ہی ایک خراب تجربہ رہا ہے۔


 

مزید پڑھیں:  شنگھائی الیکٹرک کا کے الیکٹرک خریدنے میں اظہار دلچسپی


 

گزشتہ ہفتے چین کی سرکاری کمپنی شنگھائی الیکٹرک پاور نے اس بات کا اعلان کیا تھا کہ وہ کے الیکٹرک کو خریدنے میں دلچسپی رکھتی ہے جس کی مجموعی مارکیٹ ویلیو 2.3 ارب ڈالر ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں