بدھ, مئی 22, 2024
اشتہار

ملازمہ کی لاش ملنے کا واقعہ: فاریہ خودکشی سے قبل کس سے فون پر بات کررہی تھی؟ اہم انکشاف

اشتہار

حیرت انگیز

کراچی : گھریلو ملازمہ کی لاش ملنے کے واقعے کی ابتدائی تفتیش میں خودکشی سے قبل ملازمہ فاریہ کا کسی سے فون پر بات کرنے کا انکشاف سامنے آیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے خیابان بخاری سے 16سالہ گھریلو ملازمہ کی لاش ملنے کے واقعے کی ابتدائی تفتیش میں انکشاف ہوا کہ ملازمہ مبینہ خودکشی سےقبل فون پربات کرتی رہی۔

ملازمہ کی موت سے قبل کی تصاویراے آر وائی نیوزنے حاصل کرلی ، تصاویر میں فاریہ کوپریشانی کے عالم میں دیکھا جا سکتا ہے۔

- Advertisement -

پولیس ذرائع نے بتایا کہ فاریہ دوسری لائن پر خانسامہ غلام رسول سے بات کررہی تھی، خانسامہ کو والدہ کو پیسے بھجوانےکے لیے کہا گیا تھا۔

پولیس کا کہنا تھا کہ غلام رسول کےمطابق وہ 2بار موبائل سے کیش بھجوا چکی ہے، فاریہ نے کہا تھا یہ نمبر اس کی والدہ کا ہے، رمضان میں 2ہزار اس کےبعد 5 ہزار کیش بھیجا گیا۔

ذرائع کے مطابق جانچ کرنے پرپتہ چلا نمبر والدہ نہیں بلکہ کزن کرن کا ہے تاہم واقعے سے متعلق مذید تفتصیلات حاصل کر رہے ہیں۔

دوسری جانب 16 سالہ فاریہ کاپوسٹ مارٹم مکمل کرلیا گیا ہے تاہم ابتدائی پوسٹمارٹم میں بھی وجہ موت کا تعین نہ ہوسکا، جس کے بعد ملازمہ کی لاش ورثا کے حوالےکردی گئی ہے۔

گزشتہ روزملازمہ کی لاش پنکھے پر لٹکی ہوئی ملی تھی تاہم پنکھے کے پر ٹیڑھے نہیں ہوئے لیکن لڑکی کی گردن پر نشان ضرورموجود ہے، گھر کے مالکان کی جانب سے خودکشی کا بتایا گیا تھا۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں