ہفتہ, مئی 25, 2024
اشتہار

کراچی: انفلوئنزا اور نمونیہ کے کیسز میں تیزی سے اضافہ

اشتہار

حیرت انگیز

کراچی: ملک کے سب سے بڑے شہر اور سندھ کے دارالحکومت کراچی میں انفلوئنزا اور نمونیہ وائرس تیزی سے پھیلنے لگا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں انفلوئنزا نمونیہ کے کیسز میں تیزی سے اضافہ دیکھا جارہا ہے، مہنگی ویکسین کی عدم دستیابی کے باعث یہ مرض تیزی سے پھیل رہا ہے۔

جناح اسپتال کے جنرل فزیشن ڈاکٹر ہلار شیخ نے بتایا کہ کراچی میں 70 فیصد کیسز انفلوئنزا کے حوالے سے رپورٹ ہوئے ہیں جبکہ 30 فیصد کیسز نمونیہ کی مختلف اقسام کے سامنے آرہے ہیں۔

- Advertisement -

کراچی میں نئے وائرس کا تیزی سے پھیلاؤ ، علامات کیا ہیں؟

ڈاکٹرہلارشیخ نے مزید بتایا کہ مہنگی ویکسین، عدم دستیابی مرض کے پھیلنے کی سب سے بڑی وجہ ہے۔

انفلوئنزا وائرس دنیا کے چند قدیم ترین وائرسز میں ایک ہے، جس دوران متاثرہ شخص کو نزلہ، زکام، گلے میں خارش، سر میں درد، جسم میں درد، سوزش، خارش اور بخار کے ساتھ ساتھ سانس لینے میں مشکلات کا سامنا بھی ہوتا ہے۔

ماہرین کے مطابق مذکورہ وائرس کے ذریعے سانس لینے میں مشکل سمیت ناک اور گلے میں خارش اور سوزش ہوتی ہے جب کہ جسم میں درد اور بخار بھی ہوتا ہے۔

ماہرین نے تجویز دی کہ انفلوئنزا کی علامات کے فوری بعد ڈاکٹرز سے رجوع کرکے ان کی دی گئی ہدایات پر عمل کرنا چاہئیے۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں