کراچی چیمبر نے گیس کی قیمتوں میں اضافہ مسترد کردیا، اضافہ واپس لینے کی درخواست
The news is by your side.

Advertisement

کراچی چیمبر نے گیس کی قیمتوں میں اضافہ مسترد کردیا، اضافہ واپس لینے کی درخواست

کراچی: کراچی چیمبر نے گیس کی قیمتوں میں اضافہ مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ کاروباری لاگت میں اضافے کے علاوہ سی این جی سیکٹر اور عام صنعتوں کے لیے یہ اقدام نقصان دہ ثابت ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی چیمبر کے صدر جنید اسماعیل ماکڈا نے اوگرا کی جانب سے گیس کی قیمتوں میں اضافے کے فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے حکومت سے فوری طور پر قیمتوں میں کیے گئے بے انتہا اضافے کو واپس لینے کی درخواست کی ہے۔

جنید ماکڈا کا کہنا تھا کہ گیس نرخوں میں اضافے کے نتیجے میں مہنگائی میں ہوشربا اضافہ ہوگا، جس سے غریب عوام کو سب سے زیادہم متاثر ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ وفاقی وزیر خزانہ کو گیس نرخوں میں کسی بھی قسم کے اضافے کے ساتھ انہیں اس کے نتائج سے بھی آگاہ کیا گیا لیکن بدقسمتی سے کے سی سی آئی کی درخواست پر کوئی توجہ نہیں دی گئی۔

آئی ایم ایف نے بجلی اور گیس کی قیمتوں میں اضافہ درست قرار دے دیا

ان کا کہنا تھا کہ درخواست کے باوجود گیس نرخوں میں بے انتہا اضافہ کردیا گیا جس سے ملک بھر کے سیکڑوں سی این جی اسٹیشنز بند ہو جائیں گے جس سے غریب عوام کی مشکلات بڑھیں گی اور ملک بھر میں بیروزگاری میں بھی اضافہ ہوگا۔

صدر کراچی چیمبر کا کہنا تھا کہ گیس لوڈشیڈنگ اور گیس نرخوں میں 40 فیصد اضافہ ٹرانسپورٹ سیکٹر کو بند کرنے کے مترادف ہوگا، سی این جی انڈسٹری بند ہونے سے حکومت ٹیکسوں کی مد میں حاصل ہونے والے اربوں روپے سے محروم ہو جائے گی بلکہ پیٹرول کادرآمدی بل میں 1.2 ا رب ڈالر سے بڑھ جائے گا۔

انہوں نے وزیرخزانہ اور اوگرا سے گیس نرخ بڑھانے کا نوٹی فیکیشن واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں