The news is by your side.

Advertisement

گٹکا مافیا کی سرپرستی کرنے والے بے نقاب، رپورٹ‌ میں‌ بڑے نام شامل

کراچی: سندھ بھر میں کٹگا مافیا کی سرپرستی کرنے والوں کی فہرست سامنے آگئی، جس میں انکشاف کیا گیا ہے کہ پولیس افسران بھی مکروہ دھندے میں ملوث افراد کی پشت پناہی کررہے ہیں۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق کراچی پولیس کی جانب سے گٹکا مافیا کے کارندوں، سرپرستوں اور سہولت کاروں کی فہرست سامنے آئی ہے، 23 صفحات پر مشتمل رپورٹ میں 312 گٹکا فروشوں کے نام شامل ہیں۔

کئی ماہ کی تحقیقات کے بعد تیار کی جانے والی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ پولیس افسران، اہلکار، سیاسی جماعت کے رہنما کا دست راز، جعلی صحافی اور بیٹرز گٹکا فروشوں سے وصولیاں کرتے ہیں۔

رپورٹ میں کراچی کے106بڑے گٹکا سپلائرز، حیدرآباد کے 103 گٹکا فروش،  میرپورخاص کے76، سکھرکے15،لاڑکانہ کے12 گٹکا فروشوں کے نام شامل ہیں۔

مزید پڑھیں: کراچی میں منشیات اور گٹکا مافیا کی سرپرستی کرنیوالے ایس ایچ اوز کیخلاف ایکشن جاری

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ کراچی کے ضلع وسطی میں 45 سپلائر گٹکا فروخت کررہے ہیں جبکہ ضلع کورنگی دوسرے نمبر پر ہے جہاں 23 بڑے اور بااثر افراد گٹکے کی فروخت کا کھلے عام کام کررہے ہیں۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ مہاجر قومی موومنٹ (حقیقی) کا عہدیدار، پاکستان پیپلزپارٹی کے کوآرڈیننرز کا معاون محمود بھی گٹکا فروشوں کی سرپرستی کرتا ہے۔

پولیس حکام کے مطابق اس رپورٹ کی روشنی میں اب گٹکا مافیا، کارندوں اور سرپرستوں کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں