The news is by your side.

Advertisement

کراچی، مفت لسی نہ ملنے پر پولیس اہلکاروں نے دکان میں توڑ پھوڑ مچادی

کراچی: شہر قائد کے علاقے ملیر سعود آباد میں مفت لسی نہ ملنے پولیس اہلکاروں نے دکان میں توڑ پھوڑ مچادی۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق کراچی کے علاقے ملیر سعود آباد تھانے کے پولیس اہلکاروں نے مفت لسی نہ دینے پر دکان پر دھاوا بول دیا، پولیس اہلکار دکان سے دودھ کی بوتلیں ساتھ لے گئے اور فرنیچر کو نقصان پہنچایا۔

متاثرہ دکاندار کا کہنا ہے کہ سعود آباد تھانے کے اہلکار روز مفت میں دودھ اور لسی پی کر چلے جاتے ہیں، آج دودھ اور برف ختم ہونے پر انکار کیا تو اہلکاروں نے توڑ پھوڑ کی اور تشدد کا نشانہ بنایا۔

دکاندار کا کہنا تھا کہ اے آئی جی کو واٹس ایپ نمبر پر کارروائی کے لیے درخواست دے دی ہے۔

متاثرہ دکاندار نے مطالبہ کیا کہ بدتمیزی اور تشدد کرنے والے اہلکاروں کے خلاف فوری کارروائی عمل میں لائی جائے۔

مزید پڑھیں: خاتون پولیس اہلکار رشوت لیتے ہوئے پکڑی گئی

واضح رہے کہ رواں برس اپریل میں خاتون پولیس اہلکار ریڑھی والے سے رشوت لیتے ہوئے پکڑی گئی تھی، خاتون پولیس اہلکار کو معطل کرکے سعود آباد ہیڈ کوارٹرز منتقل کردیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ اے آر وائی نیوز نے ویڈیو کے ساتھ خبر نشر کی تھی کہ خاتون پولیس اہلکار ایک ریڑھی والے سے رشوت وصول کر رہی ہے، پولیس حکام نے فوری طور پر ایکشن لیتے ہوئے مذکورہ خاتون اہلکار کو معطل کر دیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں